Wednesday , July 18 2018
Home / دنیا / سری لنکا میں فرقہ وارانہ تشدد کے بعد کرفیو نافذ

سری لنکا میں فرقہ وارانہ تشدد کے بعد کرفیو نافذ

کولمبو ۔ 18 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکا کے جنوبی ڈسٹرکٹ گال میں سنہالی فرقہ سے تعلق رکھنے والے افراد نے فرقہ وارانہ تشدد کے بعد اقلیتی مسلمانوں کے متعدد مکانات اور دوکانات پر حملے کئے جس کے فوری بعد پولیس نے حرکت میں آتے ہوئے 19 افراد کو گرفتار کیا اور کرفیو نافذ کردیا۔ پولیس نے دریں اثناء اس بات کی توثیق کرتے ہوئے کہا کہ گال ڈسٹرکٹ کے متعدد علاقوں میں کل رات کرفیو نافذ کیا گیا۔ پولیس کی خصوصی ٹاسک فورس اور فوج کو حالات پر قابو پانے کے لئے حساس مقامات پر تعینات کیا گیا ہے جبکہ 19 افراد کی گرفتاری کی بھی اطلاع ہے۔ دریں اثناء حکومت کے ایک وزیر وجیرہ ابے وردنا نے بتایا کہ کل ایک معمولی واقعہ نے فرقہ وارانہ تشدد کا روپ اختیار کرلیا۔ سری لنکا کی 21 ملین آبادی میں مسلمانوں کا تناسب صرف 10% ہے۔ مسلمانوں کو حالیہ دنوں میں ان کے خلاف تشدد برپا کرنے کی شکایت ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ پرامن طور پر اپنی زندگی گزار رہے ہیں لیکن پتہ نہیں مسلمانوں کے خلاف منافرت نے آخر ایسی صورتحال کیوں پیدا کردی ہے جس کے تحت اب یہاں کا سنہالی طبقہ ؍ فرقہ بھی مسلمانوں کا دشمن نظر آرہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT