Tuesday , December 12 2017
Home / کھیل کی خبریں / سری لنکا کیخلاف آئی سی سی کی اینٹی کرپشن تحقیقات

سری لنکا کیخلاف آئی سی سی کی اینٹی کرپشن تحقیقات

 

دوبئی 24 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے سری لنکا کرکٹ میں بدعنوانیوں کی خبروں کے بعد اینٹی کرپشن تحقیقات کا آغاز کردیا ہے لیکن یہ واضح نہیں کیا گیا ہے کہ سری لنکا میں کس خاص سیریز یا کسی اور زمرہ کے تحت تحقیقات کی جائیں گی۔ آئی سی سی کے بیان میں کہا گیا ہے کہ آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ (اے سی یو) کے عہدیداروں نے حالیہ دنوں میں سری لنکا کا دورہ کیا ہے جو دراصل تحقیقات کے ضمن میں کیا جانے والا دورہ ہے۔ آئی سی سی کے جنرل منیجر اور اے سی یو کے عہدیدار الیکس مارشل نے کہا ہے کہ آئی سی سی کی اینٹی کرپشن یونٹ نے سری لنکا میں بدعنوانیوں کی تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔ یاد رہے سری لنکا کو اپنی گھریلو سیریز میں زمبابوے کے خلاف 2-3 کی شکست برداشت کرنی پڑی تھی جس کے بعد ہندوستان کے خلاف اِسے 3 ٹسٹ، 5 ونڈے اور ایک واحد ٹوئنٹی 20 مقابلے میں مکمل صفائے کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ آئی سی سی کا اینٹی کرپشن کے ضمن میں تحقیقات کا بیان سری لنکا کرکٹ (ایس ایل سی) کے اُس بیان کے بعد آیا ہے جس میں ایس ایل سی نے کہا ہے کہ حیران کن الزامات کے بعد اِس نے اپنے 40 کنٹراکٹ کھلاڑیوں کو فوری تحقیقات کے لئے طلب کیا ہے جن پر سابق کھلاڑی اور مودیا وکرما سنگھے نے الزامات عائد کئے ہیں۔ آئی سی سی کے اے سی یو کی جانب سے سری لنکا میں تحقیقات کا آغاز ہوچکا ہے اور یہ عالمی کرکٹ باڈی کی جانب سے کیا جانے والا معمول کا کام ہے۔ سری لنکا کے کرکٹ عہدیداروں کا حوالہ دیتے ہوئے ذرائع نے کہا ہے کہ آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کے تین عہدیدار سری لنکا پہونچے تھے تاہم اِس ضمن میں سری لنکا کرکٹ کے عہدیداروں نے لب کشائی سے گریز کیا۔ دوسری جانب 46 سالہ وکرما سنگھے جوکہ سابق فاسٹ بولر ہیں اور انھوں نے سری لنکا کی 40 ٹسٹ اور 134 ونڈے مقابلوں میں نمائندگی کی ہے، انھوں نے اپنے ایک ٹیلی ویژن انٹرویو میں کھلاڑیوں پر الزامات عائد کئے۔ تاہم بعدازاں انھوں نے بیان دیتے ہوئے کہاکہ انھوں نے سری لنکائی کھلاڑیوں کے خلاف کبھی الزامات عائد نہیں کئے بلکہ انھوں نے مطالبہ کیاکہ حالیہ سیریز میں ٹیم کی ناقص کارکردگی کی تحقیقات کی جانی چاہئے کیوں کہ بدعنوانیوں کی افواہوں کا بازار گرم تھا۔

TOPPOPULARRECENT