Monday , November 20 2017
Home / کھیل کی خبریں / سری لنکا کیخلاف آج تیسرا ونڈے‘ہندوستان کی سیریز پر نظر

سری لنکا کیخلاف آج تیسرا ونڈے‘ہندوستان کی سیریز پر نظر

پالی کیلے۔26اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکا کے خلاف پہلے دو ونڈے میچوں میں فتوحات سے پرعزم ہندستانی ٹیم یہاں کل کھیلے جانے والے سیریز کے تیسرے میچ میں بھی کامیابی کے ساتھ سیریز پر قبضہ کرنے کے مقصد کے ساتھ اترے گی۔ویراٹ کوہلی کی کپتانی میں ہندستانی ٹیم نے دمبولا میں پہلے ون ڈے میں نو وکٹوں سے کامیابی حاصل کی تھی لیکن دوسرے ونڈے میں اس نے ڈگمگانے کے بعد تین وکٹ کی دلچسپ جیت حاصل کی ۔ اس کامیابی کے بعد پانچ میچوں کی سیریز میں مہمان ٹیم نے بھلے ہی2-0 کی برتری حاصل کرلی لیکن دوسرے میچ میں مڈل آرڈر کے کی ناقص فارم نے اسے ضرور سوچنے پر مجبور کر دیا ۔اس وقت ہندستانی ٹیم میں بہترین تال میں ہے اور میزبان ٹیم کے خلاف ٹسٹ سیریز میں 0-3 سے کامیابی کے بعد اس نے ونڈے میں بھی شاندار آغاز کیا اوررواں سیریز میں بھی کامیابی کے امکانات روشن کرلئے ہیں۔ فی الحال ہندستانی ٹیم کی موجودہ فارم کو دیکھتے ہوئے یہی امید کی جا رہی ہے کہ وہ یہاں تیسرے ون ڈے میں جیت کے ساتھ سیریز میں 0-3 کی ناقابل تسخیر سبقت حاصل کر ے گی۔ ٹیم میں نوجوان اور تجربہ کار کھلاڑیوں کا شاندر مجموعہ ہے اور تمام کھلاڑیوں نے اب تک اپنی ذمہ داری صحیح طریقے سے ادا کی ہے ۔ خاص طور پر بولنگ میں تجربہ کار کھلاڑیوں رویندر جڈیجہ، روی چندرن اشون، محمد سمیع کی غیر موجودگی میں ٹیم میں شامل جسپریت بمراہ، یجویندر چہل، اسپنر کیدار جادھو اور نوجوان اکشر پٹیل نے میزبان ٹیم کو دونوں ہی میچوں میں پریشان کر رکھا ہے ۔ ہندستان کو دوسرے ونڈے میں بھلے ہی جدوجہد کرنا پڑا تھا لیکن اس کے لیے کچھ مثبت باتیں بھی سامنے آئیں۔

سابق کپتان مہندر سنگھ دھونی کا پرانے انداز میں بیٹنگ کرنا، روہت شرما کا فارم میں واپس آنا اوربھونیشور کمار کا بہترین بیٹنگ کرنا مجموعی طور پر ہندوستانی ٹیم کے کئے مثبت پہلو ہیں۔ہندوستانی بولروں نے دونوں ہی میچوں میں تسلی بخش کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ مہمان ٹیم کا بیٹنگ شعبہ میزبان ٹیم سے زیادہ مضبوط ہے ۔ دوسری جانب سری لنکا کے لئے مشکلیں بڑھتی جا رہی ہیں لیکن ٹیم کا حوصلے بڑھانے میں اسپنر اکیلا دھننجے کا اہم رول ہے جنہوں نے اپنے کیریئر کی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے54 رنز پر چھ وکٹ حاصل کئے اور ایک وقت کامیابی کو اپنی ٹیم کی طرف موڑ دیا تھا۔ دھننجے نے میچ میں نہایت نپی تلی بولنگ کی تھی جس سے ہندوستان کو کافی جدوجہد کرنا پڑا اور انہوں نے اپنی بولنگ سے تین گیندوں پر کیدار جادھو، کوہلی اور لوکیش راہول کو پانچ گیندوں کے اندر اندر اپنا شکار بنایا۔ کپتان کوہلی نے میچ کے بعد دھننجے کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہمیں اس بہترین بولنگ کیلئے دھننجے کو سہرا دینا چاہیے ۔سری لنکا کے لیے مایوس کن بات یہ رہی کہ اس کے سب سے تجربہ کار فاسٹ بولر لستھ ملنگا فارم میں نہیں ہیں۔ انہوں نے سری لنکا سے پہلے ویسٹ انڈیز کے دورے میں تسلی بخش کارکردگی پیش کی تھی ۔ مڈل آرڈر بیٹسمینوں میں آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا بھی موجود ہیں جنہوں نے ٹسٹ سیریز میں بہت متاثر کیا تھا۔ ہندستان اور سری لنکا کی بولنگ میں ایک بڑا فرق نظر آرہا ہے جبکہ دونوں ٹیموں کی بیٹنگ میں زمین آسمان کا فرق ہے ۔ پہلے میچ میں مین آف دی میچ بنے اوپنر شکھر دھون اس وقت ہندستان کے لئے ایک طاقت بنے ہوئے ہیں جو اس دورے میں اب تک تین سنچری بناچکے ہیں ۔ سری لنکا کی ٹیم میں ایک مرتبہ پھر اوپنر نروشن ڈکویلا سے اچھی شروعات کی امید رہے گی جنہوں نے پہلے میچ میں 74 گیندوں میں64 رنز بنائے تھے ۔ انہوں نے دوسرے ونڈے میں 31 رنز بنائے ۔ اس کے علاوہ دوسرے ونڈے میں58 رنز بنانے والے ملندا شری وردھنے اور سابق کپتان اور آل راؤنڈر اینجلیو میتھیوز کے ساتھ بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے میں بھی کامیاب رہے ۔

TOPPOPULARRECENT