Thursday , September 20 2018
Home / شہر کی خبریں / سر نظامت جنگ وقف جائیداد کے تحفظ کیلئے وقف بورڈ سرگرم

سر نظامت جنگ وقف جائیداد کے تحفظ کیلئے وقف بورڈ سرگرم

لائبریری کو اقامتی اسکول سوسائٹی کے حوالے کرنے کا فیصلہ ، قابضین کے خلاف مقدمات، محمد سلیم ، شاہنواز قاسم اور شفیع اللہ کا دورہ
حیدرآباد ۔ 10 ۔ جولائی (سیاست نیوز) تلنگانہ وقف بورڈ نے نارائن گوڑہ میں واقع سر نظامت جنگ بہادر کی اوقافی اراضی کے تحفظ میں پیشرفت کرتے ہوئے غیر مجاز قابضین کے خلاف مقدمات درج کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ سر نظامت جنگ لائبریری کو تلنگانہ اقلیتی اقامتی اسکول سوسائٹی کے زیر انتظام دیا جائے گا تاکہ مختلف شعبہ جات میں قیمتی اور نادر کتابوں کا تحفظ ہوسکے ۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم ، ڈائرکٹر اقلیتی بہبود و چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ شاہنواز قاسم آئی پی ایس اور سکریٹری اقامتی اسکول سوسائٹی بی شفیع اللہ نے دیگر عہدیداروں کے ہمراہ آج نارائن گوڑہ کی قیمتی اوقافی جائیداد کا معائنہ کیا۔ اس کے علاوہ سر نظامت جنگ لائبریری میں موجود کتابوں کے ذخیرہ کا معائنہ کیا۔ لائبریری میں انگریزی اور اردو کی انتہائی نادر کتابیں دستیاب ہیں جو دنیا کی کسی اور لائبریری میں شائد ہی مل سکیں۔ کتابوں کے اس ذخیرہ کا تحفظ کرنے کیلئے اقامتی اسکول سوسائٹی کے سکریٹری بی شفیع اللہ نے اپنی خدمات پیش کی ہیں۔ صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ لائبریری کو معاہدہ کے ذریعہ اقامتی اسکول سوسائٹی کے حوالہ کیا جائے گا۔ لائبریری کے معائنہ کے موقع پر نادر کتابوں کو دیکھ کر عہدیدار حیرت میں پڑ گئے۔ شاہنواز قاسم نے کئی کتابوں کے ٹائٹل کی اپنے فون کے ذریعہ تصویر کشی کی اور کہا کہ وہ کتابوں کے متعلق کا ذوق رکھتے ہیں۔ لائبریری میں کتابوں کی عدم صفائی کے سبب گرد و غبار جم چکی ہے۔ سر نظامت جنگ وقف کی دیگر جائیدادوں کا معائنہ کرنے کے بعد صدرنشین وقف بورڈ نے عہدیداروںکو ہدایت دی کہ جائیداد اور کرایہ داروں کی تفصیل تیار کی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ جس اراضی پر غیر مجاز قبضے ہورہے ہیں، ان کے خلاف پولیس میں ایف آئی آر درج کیا جائے گا ۔ اراضی کے ایک حصہ پر غیر مجاز تعمیرات کا سلسلہ جاری تھا جسے پولیس کی مداخلت سے فوری روک دیا گیا ہے ۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے محمد سلیم نے کہا کہ وقف جائیداد ہمیشہ وقف ہوتی ہے اور کوئی بھی شخص اس پر اپنی دعویداری پیش نہیںکرسکتا۔ سر نظامت جنگ وقف جائیداد کے تحت جملہ 4 ایکر اراضی موجود ہے جس میں انجمن علم و عمل ، مجلس تعمیر ملت کا دفتر ، شادی خانہ اور تقریباً 6 مکانات موجود ہے۔ مین روڈ پر واقع پٹرول پمپ بھی وقف اراضی پر ہوسکتا ہے جس کا ریکارڈ وقف بورڈ سے نکالا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ جائیداد وقف بورڈ کی راست نگرانی میں ہے اور بعض افراد ایک ہزار گز پر اپنی دعویداری پیش کر رہے ہیں جن کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی ۔ شادی خانہ کے مالک کی جانب سے کرایہ کی عدم ادائیگی کا ذکر کرتے ہوئے محمد سلیم نے کہا کہ کرایہ داروں کو نوٹس دی جائے گی ۔ مکانات میں صرف تین کرایہ دار وقف بورڈ کو کرایہ ادا کر رہے ہیں۔ تعمیر ملت کی جانب سے بھی وقف بورڈ کو کوئی کرایہ نہیں دیا جاتا۔ سر نظامت جنگ لائبریری مقفل تھی جس کا قفل توڑ کر وقف بورڈ نے آج اپنی تحویل میں لے لیا ہے ۔ اسی دوران ڈائرکٹر اقلیتی بہبود شاہنواز قاسم نے بتایا کہ قیمتی کتابوں کے ساتھ لائبریری کو ترقی دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مختلف شعبہ جات میں انگریزی اور اردو میں نادر کتابیں دستیاب ہے۔ میڈیسن ، انگلش لٹریچر ، تاریخ اور شعر و ادب سے متعلق کتابیں موجود ہیں۔ شاہنواز قاسم نے کل چہارشنبہ سے کتابوں کی تفصیلات پر مشتمل کیٹلاگ تیار کرنے کی ہدایت دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام کرایہ داروں اور ان کی جانب سے ادا کئے جارہے کرایہ کی تفصیلات اکھٹا کرنے کے بعد نہ صرف کرایہ میں اضافہ کیا جائے گا بلکہ غیر مجاز قابضین کی برخواستگی کے اقدامات کئے جائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT