Monday , December 18 2017
Home / ہندوستان / سزائے موت پر حکم التوا کیلئے یعقوب میمن سپریم کورٹ سے رجوع

سزائے موت پر حکم التوا کیلئے یعقوب میمن سپریم کورٹ سے رجوع

قانونی تقاضوں کی تکمیل نہ ہونے کا ادعا ۔ گورنر سے رحم کی درخواست کا بھی حوالہ

نئی دہلی 23 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) ممبئی میں 1993 میں ہوئے سلسلہ وار بم دھماکوں کے کیس میں سزائے موت پانے والے واحد ملزم یعقوب عبدالرزاق میمن نے آج سپریم کورٹ میں درخواست دائر کرتے ہوئے ان کی سزائے موت پر عمل آوری روکنے کی استدعا کی ہے ۔ شیڈول کے مطابق یعقوب میمن کو 30 جولائی کو پھانسی دی جانیو الی ہے ۔ میمن نے اپنی درخواست میں کہا کہ ان کے خیال میں اس کیس میں تمام قانونی تقاضوں کی تکمیل نہیں کی گئی ہے اور خود انہوں نے رحم کیلئے گورنر مہاراشٹرا سے بھی درخواست کی ہے ۔ یعقوب میمن نے سپریم کورٹ کی جانب سے ان کی کیوریٹیو درخواست کو منگل کے دن مسترد کئے جانے کے فوری بعد گورنر سے رحم کی درخواست کی تھی ۔

چیف جسٹس ایچ ایل دتو کی قیادت والی ایک سہ رکنی بنچ نے یعقوب میمن کی درخواست مسترد کردی تھی اور کہا تھا کہ انہوں نے جن بنیادوں پر درخواست دائر کی ہے وہ سپریم کورٹ کے 2002 میں واضح کردہ رہنما خطوط کے تحت نہیں آتے ۔ میمن کی یہ آخری عدالتی کوشش تھی ۔ میمن نے اپنی درخواست میں ادعا کیا تھا کہ اسے 1996 سے شیزو فرنیا کامرض لاحق ہے اور وہ تقریبا 20 سال سے جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہے ۔ انہوں نے خواہش کی تھی کہ ان کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کردیا جائے ۔ ان کا ادعا تھا کہ کسی سزا یافتہ کو عمر قید کی سزا اور پھر سزائے موت نہیں دی جاسکتی ۔ سپریم کورٹ نے 9 اپریل کو جاریہ سال ان کی درخواست کو مسترد کردیا تھا جس میں انہوں نے سزائے موت پر نظر ثانی کی خواہش کی تھی ۔ عدالت نے 21 مارچ 2013 کو سنائی گئی سزائے موت کو برقرار رکھا تھا ۔

یعقوب میمن سے بیوی ‘ بیٹی کی ملاقات
ناگپور 23 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) ممبئی سلسلہ وار دھماکوں کے ملزم یعقوب عبدالرزاق میمن نے آج کچھ وقت اپنے افراد خاندان کے ساتھ گذارا ۔ آج ناگپور سنٹرل جیل میں ان سے ان کی شریک حیات راہین میمن اور دختر زبیدہ نے ملاقات کی ۔ دونوں کے ساتھ ان کے کچھ رشتہ دار بھی تھے ۔ یہ لوگ آج صبح ممبئی سے بذریعہ ٹرین ناگپور پہونچے اور ان سے صبح 9 بجے جیل میں ملاقات کی ۔ ذرائع نے یہ بات بتائی ۔ یہ ملاقات ایک گھنٹے کی رہی جس کے بعد یہ لوگ ایک خانگی گاڑی میں 11بجے کے قریب وہاں سے روانہ ہوگئے ۔
سشما کے استعفی تک کوئی مباحث نہیں : راہول گاندھی
نئی دہلی 23 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) للت مودی تنازعہ پر وزیر اعظم نریندر مودی کی خاموشی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے کہا کہ ان کی پارٹی اس وقت تک مباحث کی مخالف ہے جب تک وزیر خارجہ سشما سوراج استعفی پیش نہیں کردیتیں ۔ یہ ادعا کرتے ہوئے کہ وزیر اعظم کی ساکھ متاثر ہوگئی

TOPPOPULARRECENT