Wednesday , September 19 2018
Home / عرب دنیا / سزائے موت کے چار مجرم لاہور ہائیکورٹ سے بری

سزائے موت کے چار مجرم لاہور ہائیکورٹ سے بری

اسلام آباد ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی کی لاہور ہائیکورٹ نے سزائے موت یافتہ چار مجروم کو ثبوتوں کے فقدان کی بناء پر بری کردیا۔ انسداد دہشت گردی عدالت نے کہ شیعہ مسجد پر خودکش حملہ میں ملوث ہونے کا مجرم قرار دیتے ہوئے سزائے موت سنائی تھی۔ اس حملہ میں 19 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ لاہور ہائیکورٹ کی راولپنڈی بنچ نے 2004ء کے فیصلہ کو برعکس کردیا۔ راولپنڈی میں 2002ء میں شاہ نجف امام بارگاہ پر خودکش حملہ میں 19 افراد ہلاک اور 35 زخمی ہوئے تھے۔ جسٹس عبادالرحمن لودھی اور جسٹس قاضی محمد امین پر مشتمل لاہور ہائیکورٹ بنچ نے مقدمہ کی سماعت کی تھی جبکہ مجرم قرار دیئے ہوئے افراد نے بے قصور ہونے کا دعویٰ کیا تھا۔ عدالت نے انہیں بری کردیا۔ یہ برات فوجی عدالتوں کی تنظیم جدید سے چند ہی دن قبل منظرعام پر آئی ہے۔ پاکستان میں 6 سال سے عائد سزائے موت پر امتناع گذشتہ ماہ برخاست کردیا گیا جبکہ پشاور میں فوج کے زیرانتظام اسکول پر دہشت گرد حملہ میں 150 افراد ہلاک کردیئے گئے جن میں بیشتر بچے تھے۔ سزائے موت پر عائد امتناع کی برخاستگی کے بعد تاحال 7 مجرموں کو پھانسی پر لٹکا دیا گیا ہے۔ لاہور ہائیکورٹ کی دو رکنی بنچ نے آج خود کو بے قصور قرار دینے والے 4 سزائے موت یافتہ مجرموں کو ثبوت کی کمی کی بناء پر بری کردیا۔

TOPPOPULARRECENT