Thursday , November 23 2017
Home / عرب دنیا / سشما سوراج کا دورۂ مصر ، باہمی تعلقات کے احیاء کا بہترین موقع

سشما سوراج کا دورۂ مصر ، باہمی تعلقات کے احیاء کا بہترین موقع

دونوں ملکوں کے درمیان باہمی مفاد کے مختلف اُمور پر تبادلہ خیال کریں گے

قاہرہ ۔ 22 اگسٹ ۔(سیاست ڈاٹ کام) وزیر خارجہ سشما سوراج کے دو روزہ دورۂ مصر سے دونوں ملکوں ہندوستان اور مصر کے درمیان باہمی تعلقات کے احیاء کا ایک بہترین موقع ملے گا ۔ اس بات چیت میں باہمی مفاد کے مختلف اُمور کو فروغ دینے پر توجہ دی جائے گی ۔ اس میں دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کا معاملہ بھی شامل ہے ،مصر میں سفیر ہند نے یہ بات بتائی ۔ وزیر خارجہ سشما سوراج کا یہ دورۂ مصر پہلی مرتبہ ہورہا ہے وہ نہایت ہی قریبی تعلقات کو فروغ دینے کے تناظر میں دورہ کررہی ہیں کیوں کہ ایک طویل مدت سے ہم مصر کے ساتھ تعلقات کو مزید بہتر بنانے کوشاں ہیں اور اس کوشش کے ذریعہ دوستی کو ایک نئی سطح عطا کرنا چاہتے ہیں ۔سفیر ہند برائے مصر سنجے بھٹا چاریہ نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ وزیر خارجہ سشما سوراج کا مجوزہ دورہ مصر کافی اہمیت کا حامل ہوگا۔ مصر کی قیادت سے ان کی ملاقات میں عالمی مفادات کے حامل مسائل پر بات چیت ہوگی ۔ وزیر خارجہ پیر 24 اگسٹ سے مصر کا دو روزہ دورہ کررہی ہیںجو توقع ہے کہ باہمی تعلقات کو ایک نئی سمت عطا کرنے میں مددگار ثابت ہوگا ۔ اپنے دورہ کے دوران سشما سوراج مصر کے صدر عدیل فتح السیسی سے ملاقات کریں گی ،اپنے مصر کے ہم منصب سمیع شکوری سے باہمی بات چیت کریں گی اور نبیل العربی سے ملاقات کریں گی جو عرب لیگ کے سکریٹری جنرل میں ان کے علاوہ دیگر قائدین سے بھی ان کی بات چیت مقرر ہے ۔ سنجے بھٹا چاریہ نے کہا کہ دونوں ملکوں کے حالات یکساں ہیں اور دونوں نے اپنے تجربات کو ایک دوسرے کے سامنے پیش کرنے کا عہد بھی کیا ہے ۔ ہندوستان اور مصر طویل عرصہ سے اپنے روایتی تعلقات اوردوستانہ روابط کے لئے جانے جاتے ہیں ۔ اس دورہ کے دوران ہمارے تعاون کو فروغ دینے اور دیگر شعبوں میں تعاون کے لئے کوشش کی جائے گی ۔ سیاست اور سنجیدگی کے معاملہ میں ہم نے مصر کے ساتھ اچھے روابط رکھے ہیں، دہشت گردی کے خلاف لڑائی میں بھی برابر کاتعاون ہے ۔ یہ دہشت گردی ساری دنیا اور علاقائی سلامتی کیلئے چیلنج بن گئی ہے ، اس کا مقابلہ کرنا نہایت ہی ضروری ہے ۔ ہمارا ایقان ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان مضبوط معاشی تعاون رہا ہے ۔باہمی تجارت اور سرمایہ کاری کے اُمور میں بھی بحسن خوبی انجام پارہے ہیں لیکن ہمیں مزید عظیم تر سطح پر تعلقات کو فروغ دینا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT