Thursday , September 20 2018
Home / جرائم و حادثات / سعادت نگر بالاپور میں ایک شخص پر قاتلانہ حملہ

سعادت نگر بالاپور میں ایک شخص پر قاتلانہ حملہ

روڈی شیٹرس اور غیر سماجی عناصر پر قابو پانے پولیس ناکام
حیدرآباد /7 مارچ ( سیاست نیوز ) سعادت نگر بالاپور میں ایک شخص پر قاتلانہ حملہ کی سنگین واردات پیش آئی ۔ اراضی معاملات میں فرضی دستاویزات کے ذریعہ ناجائز قبضہ اور لینڈ مافیا کی جبراً وصولی رچہ کنڈہ و سائبرآباد کے علاقوں میں ان دنوں عروج پر پہونچ گئی ہے ۔ روڈی شیٹر اور غنڈہ عناصر کی غیر سماجی سرگرمیوں پر قابو پانے کے اقدامات میں ناکام ثابت ہو رہے ہیں ۔ اس طرح کے ایک واقعہ میں صلالہ کے ساکن حسن بارکبہ نامی شخص پر قاتلانہ حملہ کا واقعہ پیش آیا ۔ زخمی شخص کے الزامات کے مطابق روڈی شیٹرس الیاس نواب اور احمد جابری نے ان کے چند ساتھیوں کے ہمراہ ان پر قاتلانہ حملہ کیا ۔ حسن بارکبہ کے الزامات کے مطابق الیاس نواب نے انہیں ایک اراضی اقساط پر فروخت کی جوکہ فرضی اور جعلی دستاویزات کے ذریعہ ناجائز قبضہ کی ہوئی ہے ۔ 10 ہزار کے دو اقساط ادا کرنے کے بعد زخمی شخص نے رقم واپس مانگی اور اراضی میں خامی کے سبب اسے قبول کرنے سے انکار کردیا ۔ بارکبہ کو رقم دینے کے بہانہ سعادت نگر طلب کیا گیا اور شدید زخمی کیا گیا حسن بارکبہ نے حملہ آوروں پر سنگین الزامات لگاتے ہوئے کہا کہ ہم روڈی شیٹرس ہیں ۔ ہم سے پیسے پوچھنے کی ہمت نہیں کرنا چاہئے ۔ اور پولیس میں شکایت سے ہمارا کچھ نہیں بگڑے گا ۔ پولیس اسٹیشن ہمارے اختیار میں ہے ۔ اس شخص نے کہا کہ وہ اب اچھے شہری کی طرح زندگی بسر کرنا چاہتا ہے اور جیل کے پٹرول پمپ پر ماہانہ 12 ہزار روپئے کی تنخواہ پر کام کر رہا ہے ۔ تاہم اس کے برخلاف بالاپور پولیس کا کہنا ہے کہ حسن بارکبہ کی شکایت پر اور حسن بارکبہ کے خلاف شکایت مقدمات درج کئے گئے ہیں اور تحقیقات جاری ہے ۔ زخمی شخص کے خلاف لڑکی سے چھیڑ چھاڑ اور بدسلوکی مبینہ کوششیں کے الزامات کی شکایت وصول ہوئی ہے ۔ بالاپور پولیس مصروف تحقیقات ہے ۔

TOPPOPULARRECENT