Saturday , January 20 2018
Home / عرب دنیا / سعودی خواتین کو بلدی انتخابات میں مقابلہ کی اجازت

سعودی خواتین کو بلدی انتخابات میں مقابلہ کی اجازت

ریاض، 24 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ایک نئے قانون کے تحت سعودی عرب نے خواتین کو حق رائے دہی سے استفادہ کرنے اور بلدی انتخابات میں مقابلہ کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ اخباری اطلاعات کے بموجب یہ احکام نافذالعمل ہوچکے ہیں۔ سعودی عرب کی مجلس وزراء کے ایک اجلاس نے جس کی صدارت نائب وزیراعظم و وزیر دفاع ولیعہد شہزادہ سلمان نے کی، قانون کو منظوری دی ت

ریاض، 24 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ایک نئے قانون کے تحت سعودی عرب نے خواتین کو حق رائے دہی سے استفادہ کرنے اور بلدی انتخابات میں مقابلہ کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ اخباری اطلاعات کے بموجب یہ احکام نافذالعمل ہوچکے ہیں۔ سعودی عرب کی مجلس وزراء کے ایک اجلاس نے جس کی صدارت نائب وزیراعظم و وزیر دفاع ولیعہد شہزادہ سلمان نے کی، قانون کو منظوری دی تھی۔ اِس سے مرد و خواتین دونوں کو بحیثیت امیدوار مقابلہ کرنے، حق رائے دہی سے استفادہ اور آئندہ سال کے بلدی انتخابات کے لئے کسی کا نام پیش کرنے کے مساوی حقوق حاصل ہوں گے۔ روزنامہ عرب نیوز کی خبر کے بموجب خواتین کو 2011 ء میں انتخابات میں مقابلہ کرنے کی اجازت نہیں دی گئی تھی۔ تاہم سعودی عرب کے فرمانروا شاہ عبداللہ نے کہا تھا کہ خواتین کو حق رائے دہی سے استفادہ کرنے اور 2015 ء کے انتخابات سے مقابلہ میں حصہ لینے کی بھی اجازت حاصل رہے گی۔ اس طرح شاہ عبداللہ کے وعدے کی تکمیل ہوگئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT