Friday , November 24 2017
Home / Top Stories / سعودی عرب ،اللہ کے مہمانوں کی خدمت کیلئے مکمل تیار

سعودی عرب ،اللہ کے مہمانوں کی خدمت کیلئے مکمل تیار

 

مکہ معظمہ اور مدینہ منورہ میں متعدد ترقیاتی پراجکٹس
جاریہ سال عازمین حج کیلئے کئی سہولتیں
حرم شریف میں دھوپ سے محفوظ رکھنے سائبان
نائب امیرمکہ شہزادہ عبداللہ بن بندر کا بیان

 

مکہ معظمہ ۔ 10 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب، اللہ تعالیٰ کے مہمانوں کی خدمت کیلئے مکمل تیار ہے۔ نائب امیر مکہ شہزادہ عبداللہ بن بندر نے کہا کہ دونوں مقدس مقامات مکہ معظمہ اور مدینہ منورہ میں متعدد ترقیاتی پراجکٹس کے باعث اس سال عازمین حج کیلئے بہتر سے بہتر انتظامات کئے گئے ہیں۔ ہم نے اپنے تمام وسائل کو عازمین کی خدمت کیلئے استعمال کیا ہے۔ کسی کوتاہی کے بغیر عازمین کی خدمت کو یقینی بنایا جارہا ہے۔ شہزادہ عبداللہ نے کہا کہ ان پراجکٹس کو ریکارڈ وقت میں مکمل کرلیا گیا ہے جس کا مقصد حرمین شریفین کے اندر عازمین کیلئے سہولتیں فراہم کی جائیں اور انہیں چلچلاتی دھوپ سے محفوظ رکھنے کیلئے سائبان کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔ دیگر پراجکٹس کے علاوہ جمرات میں درجہ حرارت سے محفوظ رکھنے کیلئے عازمین پر ٹھنڈے پانی کا چھڑکاؤ کیا جائے گا اس کیلئے سینکڑوں پولس نصب کئے گئے ہیں۔ جمرات سے لیکر ضلع عزیزیہ تک پیدل چلنے والے عازمین کیلئے سائبان کا بھی انتظام کیا گیا ہے تاکہ وہ دھوپ سے محفوظ رہ سکیں۔ وادی منیٰ میں الودی ہاسپٹل کے قریب پیدل چلنے والوں کیلئے ایک پل کی تعمیر عمل میں لائی گئی ہے اور میدان عرفات میں جبل رحمت کے شمالی حصہ میں ایک مستقل سمنٹ کی سیڑھیاں بھی تعمیر کی گئی ہیں۔ اسی دوران مدینہ منورہ میں روضہ حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی زیارت کیلئے آنے والے عازمین کی خدمت کیلئے بہترین انتظامات کئے گئے ہیں۔

اس وقت زائد از 529207 عازمین عبادتوں میں مصروف ہیں۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہیکہ گذشتہ سال ان ہی دنوں مدینہ منورہ میں مقیم افراد کی تعداد 818185 تھی۔ مکہ معظمہ میں طواف کعبہ میںمصروف عرب ممالک سے آنے والے عازمین کی تعداد پہلے بیاچ کے تحت عراق سے 1171 عازمین پہنچے ہیں جبکہ اس سال عراق کے 35000 عازمین حج بیت اللہ کی سعادت حاصل کریں گے۔ 19 عرب ممالک سے تقریباً 360,000 عازمین 138 سرویس دفاتر کے ذریعہ مکہ معظمہ پہنچ رہے ہیں۔ اسی دوران وزارت حج و عمرہ نے اس سال کے حج کے موقع پر رضاکارانہ طور پر آپ کا تعاون کی تنظیم قائم کی ہے۔ عازمین کی خدمت کرنے والے والینٹرس اس پروگرام کے تحت اپنے نام رجسٹر کراسکتے ہیں جنہیں جدہ میں ایرپورٹ پر بعض الیکٹرانک ڈیوائسیس کے ذریعہ خدمت انجام دینے کا موقع ملے گا۔ مکہ معظمہ، حرم شریف کے اطراف کے علاقوں کے علاوہ مدینہ منورہ میں بھی والینٹرس کی خدمات دی جارہی ہیں۔ حج کے دوران رضاکارانہ طور پر کام کرنے والے افراد عربی زبان کا ترجمہ کرنے کے علاوہ عازمین کی رہنمائی کریں گے۔ حج کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سعودی خاتون نرسوں کی جانب سے حج ٹرمنل کنگ عبدالعزیز انٹرنیشنل ایرپورٹ پر خواتین عازمین کی آمد کے ساتھ ہی ٹیکے لگائے جارہے ہیں۔ ٹرمنل کے مینجر عبدالمجید الافغانی نے کہاکہ خاتون نرسیس کو 610 مضبوط ہیلتھ کیڈر سے منسلک کیا گیا ہے جو دیگر ممالک سے آنے والے عازمین کی صحت کی جانچ کریں گے۔ ملک شام سے 15000 عازمین سعودی عرب پہنچ رہے ہیں جو ترکی کی راہ سے یہاں آئیں گے۔ شام کے حج مشن کے عہدیداروں نے بتایا کہ 180 عازمین قطر کے راستے سے آرہے ہیں۔ وزیرحج و عمرہ محمد صالح بنتن نے کہاکہ ان کی وزارت کی جانب سے اندرون ملک عازمین کے نام رجسٹر کردیئے گئے ہیں تاکہ فرضی حج کمپنیوں کو برخاست کیا جاسکے۔ اسی دوران خادم حرمین شریفین شاہ سلمان نے مراقش کے شاہ محمد ششم سے اظہارتشکر کیا جنہوں نے حج اور عمرہ عازمین کی خدمت میں سعودی حکومت کی کوششوں کی ستائش کی ہے۔ مراقش کے شاہ نے اپنے پیام میں شاہ سلمان کو مبارکباد دی ہے۔

TOPPOPULARRECENT