Wednesday , January 24 2018
Home / Top Stories / سعودی عرب اور اتحادیوں کی فضائی کارروائیاں جاری

سعودی عرب اور اتحادیوں کی فضائی کارروائیاں جاری

صنعاء ۔ 17 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) یمن کے شہر تعز میں مختلف گروپوں اور حوثی باغیوں کے درمیان زمینی لڑائی کے ساتھ سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں نے فضائی کارروائیاں بھی کیں، جبکہ القاعدہ نے مکلہ شہر کے ایئر پورٹ پر قبضہ کر لیا ہے۔ ریاض میں پریس کانفرنس میں اتحادی فوج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل احمد عسیری نے بتایا کہ یمن کے شہر تعز میں شدید لڑائی کے بعد اتحادی طیاروں کی فضائی کارروائی جاری ہے، تاہم 24گھنٹے آپریشن کے بعد شہر میں اب صورتحال معمول پر آگئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اتحادی طیارے ان رہائشی عمارتوں کو نشانہ بنا رہے ہیں، جہاں صرف باغی موجود ہیں۔ ایک غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق یمن کے سابق صدرعلی عبداللہ صالح اور صدر منصور ہادی کے حامیوں کے درمیان جھڑپیں ہو رہی ہیں۔ جس میں دبابوں سمیت بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ عدن شہر سمیت جنوبی صوبوں میں منصور ہادی کے حامی جنگجووں اور فوج کی حوثی باغیوں کے ساتھ لڑائی جاری ہے۔ سعودی اتحادی طیاروں کی عدن میں تازہ بمباری میں مزید 8باغی ہلاک ہو گئے۔

یمن میں دیڑھ لاکھ افراد بے گھر ‘ فوری مدد کی اپیل : اقوام متحدہ
جنیوا 17 اپریل ( سیاست ڈآٹ کام ) یمن میں گذشتہ چند ہفتوں سے جاری گھمسان کی لڑائی میں تقریبا 1,50,000 افراد بے گھر ہوگئے ہیں ۔ اقوام متحدہ نے آج کہا کہ اس نے یمن میں جنگ کی وجہ سے متاثر ہونے والے لاکھوں افراد کی مدد کیلئے فوری طور پر 274 ملین ڈالرس کی رقم فراہم کی جانی چاہئے ۔ اقوام متحدہ نے کہا کہ گذشتہ چند ہفتوں کے دوران یمن میں جنگ اور لڑائی پھیل گئی ہے اور اس میں شدت پیدا ہوئی ہے ۔ اس جنگ کی وجہ سے اب تک بے گھر ہونے والے افراد کی تعداد 1,20,000 سے بڑھ کر 1,50,000 تک پہونچ گئی ہے ۔ اقوام متحدہ ہائی کمشنر برائے پناہ گزین کے ترجمان اڈریان اڈورڈز نے یہ بات بتائی ۔ انہوں نے کہا کہ اس تعداد میں مزید اضا فہ ہوسکتا ہے اگر تشدد کا سلسلہ جاری رہے ۔

انہوں نے کہا کہ سابق میں یمن میں جو تشدد پھوٹ پڑا تھا اس کے نتیجہ میں پہلے ہی تین لاکھ یمنی شہری بے گھر ہوگئے تھے ۔ یمن میں جاری لڑائی اور سعودی عرب کی زیر قیادت حوثی باغیوں کے خلاف جاری حملوں کے نتیجہ میں ہزاروں خاندان اپنے گھروں سے فرار ہونے پر مجبور ہوگئے ہیں اور انہیں نگہداشت صحت ‘ پانی ‘ غذائی اجناس اور دوسری بنیادی ضروریات کیلئے تک بھی جدوجہد کرنا پڑ رہا ہے ۔ اقوام متحدہ ہائی کمشنر برائے پناہ گزین نے کہا کہ اقوام متحدہ اور یمن میں ہمارے حلیفوں نے بے گھر افراد کی مدد کیلئے 274 ملین ڈالرس امداد کی اپیل کی ہے جو ہنگامی طور پر درکار ہے تاکہ 7.5 ملین افراد کی زندگیوں کا تحفظ ہوسکے اور انہیں بنیادی سہولیات فراہم کی جاسکیں۔ عالمی تنظیم صحت نے بھی یمن میں نگہداشت صحت کی ضروریات کی تکمیل کیلئے 25.2 ملین ڈالرس امداد کی اپیل کی ہے ۔ سعودی عرب کی قیادت میں علاقہ کے مختلف ممالک نے یمن میں 26 مارچ کو حوثی باغیوں کے خلاف فضائی حملوں کا آغاز کیا ہے ۔ یہاں شیعہ باغیوں نے کئی علاقوں میں پیشرفت کرتے ہوئے قبضہ کرلیا تھا جس کے بعد صدر عبدالرب منصور ہادی فرار ہوگئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT