Monday , February 26 2018
Home / عرب دنیا / سعودی عرب شاہی خاندان میں انتشار پر سرمایہ کاری میں سہولتیں فراہم کرنے آمادہ

سعودی عرب شاہی خاندان میں انتشار پر سرمایہ کاری میں سہولتیں فراہم کرنے آمادہ

ریاض ۔ 8 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب نے سرمایہ کاروں کے اندیشوں کو دور کرنے کی کوشش کی کہ انسداد بدعنوانی مہم کے نتیجہ میں کئی کاروباری اور سیاسی اہم شخصیتوں کو گرفتار کیا گیا ہے جس کی وجہ سے سیاسی عدم استحکام کے اندیشے پیدا ہوگئے ہیں۔ عرب پتی شہزادہ الولید بن طلال کو اواخر ہفتہ میں گرفتار کرلیا گیا ہے۔ یہ سعودی عرب کی جدید تاریخ کا ایک خطرناک موڑ ہے۔ عہدیداروں نے ملزمین کے بینک کھاتے منجمد کردیئے ہیں اور انتباہ دیا ہیکہ بدعنوانی کے واقعات سے مربوط اثاثہ جات کو جن کی مالیت اربوں امریکی ڈالر ہے، سرکاری اثاثہ جات کے طور پر ضبط کئے جاسکتے ہیں۔ اس کی بناء پر یہ اندیشے سرمایہ کاروں میں پیدا ہوگئے ہیں کہ مملکت میں ان کی سرمایہ کاری خطرہ سے دوچار ہے۔ ان اندیشوں کے ازالہ کیلئے مملکت سعودی عرب نے اقدامات کا آغاز کردیا ہے۔ افواہیں گرم ہیں کہ سعودی عرب کی جانب سے سرمایہ کاروں کی ایک چوٹی کانفرنس منتقل کی جائے گی لیکن سرمایہ کاروں کو اندیشہ ہیکہ چوٹی کانفرنس کے مقام سے مزید گرفتاریاں عمل میں آسکتی ہیں۔ سعودی فوجوں نے خانگی جیٹ طیاروں کو ایرپورٹس پر کھڑا کردیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT