Sunday , June 24 2018
Home / عرب دنیا / سعودی عرب میں اصلاحات کا سلسلہ جاری خواتین موٹرسیکل اور ٹرک بھی چلاسکیں گی

سعودی عرب میں اصلاحات کا سلسلہ جاری خواتین موٹرسیکل اور ٹرک بھی چلاسکیں گی

ریاض،17دسمبر(سیاست ڈاٹ کام ) مملکت سعوری عربیہ میں اصلاحات کا سلسلہ جاری ہے ۔سماجی سطح پر گزشتہ کچھ دنوں میں ہونے والے اصلاحات کے بعد اب سعودی عرب میں ٹریفک قوانین میں ترمیم کا اعلان کیا گیا ہے جس کے تحت خواتین کو گاڑی کے ساتھ اب موٹر سائیکل اور ٹرک تک چلانے کی اجازت ہو گی۔فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق سعودی حکام کا کہنا ہے کہ خواتین کو گاڑیوں کے علاوہ ٹرک اور موٹر سائیکل چلانے کی اجازت بھی ہو گئی۔سعودی عرب کے ڈائریکٹوریٹ آف ٹریفک نے سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے پر نئے قواعد و ضوابط جاری کیے ہیں جو خواتین پر ڈرائیونگ کی پابندی ختم ہونے پر نافذ ہوں گے یا ان پر عمل درآمد کیا جائے گا۔سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق ڈائریکٹوریٹ آف ٹریفک کا کہنا ہے کہ’ ہم خواتین کو موٹر سائیکل کے ساتھ ساتھ ٹرک چلانے کی اجازت دے رہے ہیں اور شاہی فرمان میں صاف صاف کہا گیا تھا کہ ڈرائیونگ سے متعلق قوانین مردوں اور خواتین کے لیے برابری کی سطح پر ہوں گے ۔’ڈائریکٹوریٹ آف ٹریفک کا مزید کہا ہے کہ خواتین ڈرائیورز کے لیے خصوصی نمبر پلیٹس جاری نہیں کی جائیں گی تاہم حادثات یا دیگر ٹریفک خلاف ورزی میں ملوث پائی جانے والی خواتین کے لیے خصوصی سینٹرز بنائے جائیں گے جن کا عملہ بھی خواتین پر ہی مشتمل ہو گا اور ٹریفک خلاف ورزیوں کو دیکھے گا۔ رواں برس ستمبر میں سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان نے شاہی فرمان جاری کیا تھا جس میں خواتین کو ملک میں پہلی بار گاڑی چلانے کی اجازت دی گئی ہے ۔ شاہی فرمان کے مطابق پابندی ہٹائے جانے سے متعلق یہ حکم 24 جون 2018 تک ہر صورت میں نافذالعمل ہو جائے گا اور اس کے ساتھ شاہی فرمان میں ٹریفک قوانین میں ترمیم کی ہدایت دی گئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT