Tuesday , October 23 2018
Home / عرب دنیا / سعودی عرب میں سنیما گھروں کی تعمیر کیلئے معاہدہ

سعودی عرب میں سنیما گھروں کی تعمیر کیلئے معاہدہ

۔2030 تک 2000 اسکرینس کے ساتھ 300 تھیٹرس کی تعمیر

ریاض ۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب میں سنیما گھروں کے قیام اور فلموں کی نمائش پر کئی دہائیوں سے جاری امتناع کی برخاستگی کے بعد امریکہ کی ایک سرکردہ سنیما کمپنی اے ایم سی انٹرٹینمنٹ نے اس قدامت پسند مملکت میں سنیما گھر بنانے اور انہیں چلانے کیلئے ایک سمجھوتہ پر دستخط کی ہے۔ اے ایم سی نے اس سمجھوتہ کا اعلان کیا اور سعودی مملکتی میڈیا نے آج اس کی توثیق کی، جس کے ساتھ ہی یہ امریکی کمپنی اب سعودی عرب کے ایک دولتمند ادارہ عوامی سرمایہ کاری فنڈ کے ساتھ مشترکہ وینچر میں شامل ہوجائے گی۔ اس معاملت کی مالی شرائط کے بشمول دیگر شرائط کی تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا گیا۔ اے ایم سی نے کہا کہ ’’سعودی عرب میں وہ اپنی تفریحی صنعت‘‘ کا بہترین قیام آگے بڑھانے کی متمنی ہے کیونکہ یہ مملکت دورجدید کی تفریحات کے دروازے کھول چکی ہے‘‘۔ اے ایم سی کے سی ای او ایڈم آرون نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ’’یہ اعلان تھیٹر نمائشی صنعت کیلئے ایک تاریخی لمحہ اور مملکت سعودی عرب کے تین کروڑ سے زائد شہریوں سے اے ایم سی فلمی مواد کے ساتھ مربوط کرنے کا ایک بہترین موقع ہے۔ ہم جانتے ہیں سعودی عرب کے یہ شہری فلموں کے پرجوش مدح ہیں اور پڑوسی ملکوں کے سفر کے موقع پر سنیما گھروں میں اکثر فلم بینی کیا کرتے ہیں‘‘۔ امریکی شہر کنساس میں واقع اے ایم سی دنیا کی سب سے بڑی فلمی کمپنی ہے اور اپنے اوڈین برینڈ کے تحت امریکہ اور یوروپ میں اس کے 11000 سنیما گھر موجود ہیں۔ تاہم اس کو دبئی میں واقع وی او ایکس سنیماس جیسی علاقائی کمپنیوں سے سخت مقابلہ رہے گا۔ وی او ایکس سنیماس اپنے 300 تھیٹروں کے ساتھ خلیج اور مشرق وسطیٰ میں ایک سرکردہ سنیما آپریٹر ادارہ ہے۔ سعودی عرب میں 2030 تا 2000 اسکرینس کے ساتھ 300 سنیما گھروں کی تعمیر متوقع ہے جس سے فلمی صنعت کو فروغ حاصل ہوگا اور معیشت میں 24 ارب امریکی ڈالر کا اضافہ ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT