Tuesday , September 25 2018
Home / عرب دنیا / سعودی عرب کا ایک شہزادہ برطرف رشتہ داروں کی گرفتاری پر تنقید کا الزام

سعودی عرب کا ایک شہزادہ برطرف رشتہ داروں کی گرفتاری پر تنقید کا الزام

دبئی ۔ 10جنوری (سیاست ڈاٹ کام) سعودی نیوز کی ویب سائیٹ کی اطلاع کے بموجب ایک سعودی شہزادہ جو مملکت کے آبی کھیلوں کے فیڈریشن کا صدر تھا، اپنے عہدہ سے برطرف کردیا گیا ہے اور اس کی جگہ ایک فوجی عہدیدار کو مقرر کیا گیا ہے۔ یہ اقدام مبینہ طور پر ایک آڈیو ریکارڈنگ کے مشاہدہ کے بعد کیا گیا ہے جس میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہیکہ وہ برسرعام شہزادوں کی گرفتاری کو جھوٹا اور غیرمنطقی قرار دے۔ تقریباً 6 منٹ طویل یہ آڈیو فلم آن لائن شائع کی گئی اور عربی زبان کے ذرائع ابلاغ کی ویب سائیٹس پر جاریہ ہفتہ شائع ہوئی ہے۔ آزادانہ ذرائع سے اس خبر کی تصدیق نہیں ہوسکی۔ سرکاری خبر رساں ویب سائیٹس سبق اور عکاظ کی اطلاع کے بموجب شہزادہ عبداللہ بن سعود بن محمد کو ان کے عہدہ سے برطرف کردیا گیا ہے۔ سعودی عرب کے اٹارنی جنرل نے اتوار کے دن کہا تھا کہ 11 شہزادے شاہی فرمان کے خلاف احتجاج کرنے اور شاہی خاندان کی مراعات پر مبنی ادائیگی کو بند کردینے کے خلاف احتجاج کی بناء پر گرفتار کئے گئے تھے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT