سعودی عرب کی داعش کیخلاف پاکستان و مصر سے امداد طلبی

ریاض۔5 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب نے داعش کے حملوں سے بچائو کے لئے پاکستان اور مصر سے مدد مانگ لی۔ خبر رساں ادارے کے مطابق سعودی عرب نے عراق میں داعش کی طرف سے مذہبی مقامات کی شہادت کے بعد مکہ کو بچانے کے لئے مدد طلب کی ہے۔ خبر رساں ادارے نے امریکی ذرائع ابلاغ کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا کہ سعودی عرب مصر اور پاکستان سے مدد کا خواہاں ہے۔ امریکی نیوز سائٹ انٹرنیشنل بزنس ٹائمز نے سعودی مشیر کے حوالے سے لکھا کہ سعودی بادشاہت مصر اور پاکستان سے اس سلسلے میں حمایت اور مدد کی کوشش میں ہے۔

کسی کو یہ یقین نہیں کہ داعش کی کیا منصوبہ بندی ہے لیکن یہ واضح ہے کہ اس گروپ کا ہدف مکہ ہے۔ داعش کی طرف سے عراق میں مذہبی مقامات پر حملوں اور ان کو شہید کرنے کے عمل کے بعد سعودی حکومت اس دھویں کو بھانپ رہی ہے، لیکن کوئی بھی اس سلسلے میں چانس نہیں لے رہا۔ شام اور اردن کی سرحدیں داعش گروپ کے زیر کنٹرول ہیں اور سعودی عرب کو اپنی جنوبی سرحدوں کی طرف سے خطرہ ہے کہ اس گروپ کا اگلا ہدف ممکنہ طور پر یہی سرحدیں ہو سکتی ہیں۔ واضح رہے کہ برطانوی اخبار ”دی ٹائمز” یہ دعویٰ کر چکا ہے کہ سعودی عرب نے داعش کے حملوں کے خطرے کے پیش نظر اپنی سرحدوں پر پاکستان اور مصر سے بلائے گئے فوجی تعینات کر دیئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT