Friday , December 15 2017
Home / عرب دنیا / سعودی عرب کے اخراجات میں تخفیف‘ مزیدبانڈس جاری سعودی تاریخ میں اولین خسارہ بجٹ‘ وزیر فینانس سعودی عرب کا دبئی میں انٹرویو

سعودی عرب کے اخراجات میں تخفیف‘ مزیدبانڈس جاری سعودی تاریخ میں اولین خسارہ بجٹ‘ وزیر فینانس سعودی عرب کا دبئی میں انٹرویو

دبئی۔6ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سعودی عرب اپنے اخراجات میں تخفیف کرے گا اور مزید بانڈس جاری کرے گا ‘ کیونکہ اسے خسارہ بجٹ درپیش ہے جو ایک ریکارڈ ہے ۔ تیل کی قیمتوں میں کمی اس کی وجہ ہے ۔ وزیر فینانس سعودی عرب نے آج کہا کہ سعودی عرب سب سے بڑی عرب معیشت اور دنیا کا سب سے بڑا تیل برآمد کرنے والا ملک ہے اس کو خسارہ بجٹ کا سامنا کرنا پڑرہا ہے جس کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی ۔ جاریہ سال خام تیل کی قیمت 50امریکی ڈالر فی بیارل سے بھی کم ہوچکی ہے تاحال اس نے زبردست مالی ذخائر پر انحصار کیا تھا تاکہ خلیج کو پُر کیا جاسکے لیکن وزیر فینانس سعودی عرب ابراہیم الآصف نے کہا کہ مزید اقدامات ضروری ہوگئے ہیں ۔ ہم اس سلسلہ میں کام کررہے ہیں ۔ غیر ضروری اخراجات میں کمی کی جائے گی ۔ وہ واشنگٹن میں سی این بی سی عربیہ سے بات چیت کررہے تھے جو امریکی خبر رساں ٹی وی چینل ہے اور دبئی میں اس کی شاخ قائم ہے ۔ وہ دبئی کے دورہ پر ملک سلمان کے ساتھ آئے ہوئے تھے ۔ انہوں نے اخراجات میں تخفیف کی تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا ‘ تاہم کہا کہ اہم اخراجات برائے تعلیمات و حفظان صحت اور انفراسٹرکچر متاثر نہیں ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ کئی پراجکٹس ہیں جو کئی سال پہلے سونچے گئے تھے لیکن ان کا ہنوز آغاز نہیں ہوا ۔ ان پراجکٹس میں تاخیر ممکن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت مزید روایتی ٹریژری بانڈس اور اسلامی شکوک بانڈس جاری کرے گی تاکہ بجٹ کے خسارہ کو پُر کیا جاسکے ۔ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے بموجب جاریہ سال سعودی عرب کے بجٹ میں 130 ارب امریکی ڈالر کا خسارہ ہے ۔ سعودی عرب نے تاحال 100ارب ریال مالیتی بانڈس جاری کئے ہیں تاکہ اس خسارہ کی پابجائی کی جاسکے ۔ انہوں نے بالکل درست عدد کا انکشاف کرنے سے انکار کردیا تاہم کہا کہ ہم مزید بانڈس جاری کریں گے اور شکوک بانڈس بعض پراجکٹس کیلئے 2015ء کے اختتام سے پہلے جاری کئے جائیں گے ۔ سعودی عرب نے سرکاری بجٹ کے جاریہ سال خسارہ کو 39ارب امریکی ڈالر ظاہر کیا ہے لیکن آئی ایم ایف اور دیگر اداروں کا خیال ہے کہ حقیقی خسارہ اس سے کہیں زیادہ ہے ۔آئی ایم ایف نے جولائی خسارہ بجٹ کی پیش قیاسی کی تھی اور کہا تھا کہ خسارہ جی ڈی پی کا 20فیصد ہوسکتا ہے ۔ جب کہ سعودی عرب کی سرمایہ کاری کمپنی جادوا نے چہارشنبہ کو کہا کہ اسے 109ارب امریکی ڈالر خسارہ کا اندیشہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT