Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / سفر ہجرت کے دوران ابو معبد کی قیام گاہ پر حضور پاکؐ نے مختصر توقف فرمایا اور دعائے برکت سے نوازا

سفر ہجرت کے دوران ابو معبد کی قیام گاہ پر حضور پاکؐ نے مختصر توقف فرمایا اور دعائے برکت سے نوازا

اسلامک ہسٹری ریسرچ کونسل انڈیا کا تاریخ اسلام اجلاس۔ڈاکٹر سید محمد حمید الدین شرفی اور دیگر کے لکچرس

حیدرآباد ۔10؍سپٹمبر( پریس نوٹ) دوران سفر ہجرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم قدید کے مقام پر ام معبد عاتکہ بنت خالد خزاعی کے خیمہ سے گزرے ۔ام معبد اپنے خیمے کے آگے چادر اوڑھ کر بیٹھا کرتی اور مسافروں کے کھانے پینے کا انتظام کرتی تھیں ۔اس وقت قحط سالی کے باعث ام معبد کچھ پیش کرنے سے معذور تھیں۔ صرف ایک بکری تھی جو کمزور ہونے کے باعث دودھ نہیں دیتی تھی اور چرنے نہیں جاتی۔حضور انورؐ نے ام معبد کی اس بکری میں برکت کی دعاء فرمائی جس کے نتیجہ میں وہ دودھ دینے لگی اور سب نے دودھ نوش کیا۔وہ بکری اس قدر برکت سے مالا مال ہوگئی کہ برسہا برس لوگ اس کے دودھ سے برکت اندوز ہوئے۔ شام کوجب ابو معبد گھر آئے تو گھر میں سارے برتن دودھ سے بھرے دیکھ کر حیران رہ گئے کیوں کہ گھر میں کوئی دودھ دینے والی بکری موجود نہ تھی۔ ام معبد نے سارا واقعہ سنایا جو دن میں گزرا۔ تب ابو معبد نے ام معبد سے کہا کہ حضورؐ کے صفات بیان کریں۔ام معبد نے بیان کیا کہ میں نے ایک ایسے شخص کو دیکھا جن کا چہرہ نہایت نورانی ہے، اخلاق اچھے ہیں، وہ حسین و جمیل ہیں، آنکھوں میں کافی سیاہی ہے، پلک کے بال خوب گھنے ہیں، آنکھوں میں بلندی ہے، آنکھ میں سیاہی کی جگہ سیاہی خوب تیز ہے اور سفیدی کی جگہ سفیدی بہت تیز ہے۔ ابروئیں باریک ہیں اور آپس میں ملی ہوئی ہیں۔ بالوں کی سیاہی بھی بہت خوب تیز ہے، گردن میں بلندی اور ڈاڑھی میں گھناپن ہے۔ جب خاموش ہوتے ہیں تو ان پر وقار چھا جاتا ہے اور جب مسکراتے ہیں تو حسن کا غلبہ ہوتا ہے۔ گفتگو ایسی موتیوں کی لڑی ہوتی ہے جو گر رہے ہوں، وہ شیریں گفتار ہیں۔ قول فیصل کہنے والے ہیں، ایسے کم گو نہیں جس سے مقصد اداد نہ ہو، نہ فضول گو ہیں، دور سے دیکھوتو سب سے زیادہ بارُعب و حسین ہیں، قریب سے دیکھو تو سب سے زیادہ شیریں گفتار و جمیل ہیں۔ ڈاکٹر سید محمد حمید الدین شرفی ڈائریکٹر آئی ہرک نے آج صبح ۹ بجے ’’ایوان تاج العرفاء حمیدآباد‘‘ واقع شرفی چمن ،سبزی منڈی اور 11.30بجے دن جامع مسجد محبوب شاہی، مالاکنٹہ روڈ،روبرو معظم جاہی مارکٹ میں اسلامک ہسٹری ریسرچ کونسل (انڈیا) آئی ہرک کے زیر اہتمام منعقدہ ’1268‘ویں تاریخ اسلام اجلاس کے پہلے سیشن میں سیرت طیبہ کے تسلسل میں واقعات ہجرت مقدسہ پر توسیعی لکچر دئیے۔ قرا ء ت کلام پاک، حمد باری تعالیٰ،نعت شہنشاہ کونین ؐ سے اجلاس کا آغاز ہوا۔اہل علم حضرات اور باذوق سامعین کی کثیر تعداد موجود تھی۔صاحبزادہ سید محمد علی موسیٰ رضا قادری حمیدی نے خیر مقدمی خطاب کیا۔مولانا مفتی سید محمد سیف الدین حاکم حمیدی کامل نظامیہ و معاون ڈائریکٹر آئی ہرک نے ایک آیت جلیلہ کا تفسیری مطالعاتی مواد پیش کیا۔پروفیسرسید محمد حسیب الدین حمیدی جائنٹ ڈائریکٹر آئی ہرک نے ایک حدیث شریف کا تشریحی اور ایک فقہی مسئلہ کا توضیحی مطالعاتی مواد پیش کیا بعدہٗ انھوں نے انگلش لکچر سیریز کے ضمن میں حیات طیبہؐ کے مقدس موضوع پراپنا’1000‘ واں سلسلہ وار لکچر دیا۔

TOPPOPULARRECENT