Thursday , December 13 2018

سفیر تلنگانہ ثانیہ مرزا کو محکمہ سرویس ٹیکس کی نوٹس

حکومت سے ملنے والے ایک کروڑ روپئے پر سرویس ٹیکس ادا نہیں کیا

جرمانہ کیساتھ 20 لاکھ روپئے واجب الادا

حیدرآباد۔9فروری (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ کی سفیر بنائے جانے کے بعد حکومت تلنگانہ کی جانب سے ٹینس اسٹار ثانیہ مرزا کو دیئے گئے ایک کروڑ روپئے پر سروس ٹیکس ادا نہ کرنے کی پاداش میں محکمہ سروس ٹیکس کی جانب سے ثانیہ مرزا کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 16فروری کو شخصی طور پر یا مسلمہ نمائندے کے ذریعہ پرنسپل کمشنر سروس ٹیکس آفس سے رجوع ہونے کی ہدایت دی اور ایسا کرنے میں ناکام ہونے کی صورت ان کے خلاف انڈین پینل کوڈ کے تحت کاروائی کا انتباہ دیا گیا ہے۔ 6فروری کو جاری کردہ اس نوٹس میں انہیں واضح ہدایت دی گئی ہے کہ وہ سروس ٹیکس کی ادائیگی میں ناکام ہوئی ہیں اور اس کے شواہد محکمہ کے پاس موجود ہیں اسی لئے انہیں یہ نوٹس جاری کرتے ہوئے ہدایت دی جاتی ہے کہ وہ تحقیقات میں تعاون کریں ۔ پرنسپل کمشنر محکمہ سروس ٹیکس کی جانب سے جاری کردہ اس نوٹس میں بتایا گیا ہے کہ یہ نوٹس سنٹرل اکسائزایکٹ 1944اور فینانس ایکٹ 1994کے تحت جاری کی جا رہی ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ تلنگانہ ایمبسیڈر بنائے جانے کے بعد حکومت تلنگانہ کی جانب سے 1کروڑ روپئے دیئے جانے پر ثانیہ مرزا نے اس رقم کا سروس ٹیکس ادا نہیں کیا تھا جس پر انہیں محکمہ سروس ٹیکس کی جانب سے تحقیقات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ (سلسلہ صفحہ 8 پر)

TOPPOPULARRECENT