Sunday , February 25 2018
Home / دنیا / سلامتی کونسل کی میانمار سے راکھین اسٹیٹ میں فوجی کارروائی بند کرنے کی اپیل

سلامتی کونسل کی میانمار سے راکھین اسٹیٹ میں فوجی کارروائی بند کرنے کی اپیل

 

اقوام متحدہ ۔ 7 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل بھی اب میانمار پر دباؤ بڑھانا چاہتی ہے جس کے لئے اس نے سب سے پہلے ایک اہم بیان جاری کرتے ہوئے میانمار سے خواہش کی ہے راکھین اسٹیٹ میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف فوجی کارروائی فوری بند کردی جائے جو بے گھر ہوچکے ہیں۔ اقوام متحدہ کے 15 رکنی طاقتور ونگ نے یہ مطالبہ بھی کیا ہے کہ اقوام متحدہ کی ایجنسیوں اور ان کے دیگر شراکت داروں کو انسانی بنیادوں پر امداد سربراہ کرنے کے لئے رسائی کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کئے جائیں۔ سیکوریٹی فورسیس کے ظلم و جبر سے خوفزدہ تقریباً 6 لاکھ روہنگیا مسلمان اس وقت بنگلہ دیش پہنچ چکے ہیں جہاں وہ انتہائی غیر انسانی ماحول میں زندگی گزارنے پر مجبور ہیں جن میں اکثریت روہنگیا مسلمانوں کی ہے۔ روہنگیا مسلمانوں کے متعدد مواضعات کو جلاکر خاکستر کردیا اور انہیں وہاں سے نکلنے پر مجبور کیا گیا۔ دوسری طرف میانمارکی فوج کا استدلال ہے کہ وہ صرف دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کررہی ہے۔ عام شہریوں کو نشانہ نہیں بنایا گیا۔ تاہم عینی شاہدین اور پناہ گزینوں نے میانمار کی فوج کے اس دعوے کو جھوٹا قرار دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT