سلمان خورشید کے تبصروں کا سپریم کورٹ اور

نئی دہلی 14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج وزیر خارجہ سلمان خورشید کے سپریم کورٹ اور الیکشن کمیشن کے کردار پر اعتراض کرتے ہوئے تبصرہ کرنے پر سخت اعتراض کیا اور کہاکہ دونوں اداروں کو اِس کا ازخود نوٹ لینا چاہئے۔ بی جے پی نے سلمان خورشید اور کانگریس پر الزام عائد کیاکہ وہ دستوری اداروں کی تحقیر کررہی ہے اور اُس کی ذہنیت ’’غیر جمہ

نئی دہلی 14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج وزیر خارجہ سلمان خورشید کے سپریم کورٹ اور الیکشن کمیشن کے کردار پر اعتراض کرتے ہوئے تبصرہ کرنے پر سخت اعتراض کیا اور کہاکہ دونوں اداروں کو اِس کا ازخود نوٹ لینا چاہئے۔ بی جے پی نے سلمان خورشید اور کانگریس پر الزام عائد کیاکہ وہ دستوری اداروں کی تحقیر کررہی ہے اور اُس کی ذہنیت ’’غیر جمہوری‘‘ ہے۔ بی جے پی کے ترجمان پرکاش جاودیکر نے کہاکہ سلمان خورشید نے جو کچھ کہا ہے بہت خطرناک ہے۔ عدالت اور الیکشن کمیشن کو اِس کا ازخود نوٹ لینا چاہئے۔ کئی دیگر کانگریسی قائدین نے بھی اِسی ذہنیت کی عکاسی کی ہے اور تمام دستوری اداروں جیسے سی اے جی، سی وی سی، پی اے سی یا جے پی سی کی تحقیر کی ہے۔ سلمان خورشید جو کچھ کہہ رہے ہیں وہ کوئی انوکھا واقعہ نہیں ہے۔ کانگریس کے سینئر قائد نے کہاکہ اب ہم کسی کو پینے کا پانی بھی پیش نہیں کرسکتے کیونکہ اِس سے پالیسی سازی مسخ ہوجائے گی۔ وہ مجرم ارکان مقننہ کو نااہل قرار دینے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کا حوالہ دیتے ہوئے سلمان خورشید نے کہا تھا کہ یہ جج کا اپنا قانون ہے۔ اُنھوں نے یہ بھی کہا تھا کہ وسیع پیمانے پر الیکشن کمیشن کے رہنمایانہ خطوط فلسفیانہ رویہ ہیں۔ آپ کچھ بھی کریں یا کہیں چاہے وہ انتخابات نہیں جیت سکتے۔ لیکن اِسے قابل اعتراض قرار دیا جاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT