Wednesday , June 20 2018
Home / سیاسیات / سماجوادی پارٹی یو پی یونٹ تحلیل

سماجوادی پارٹی یو پی یونٹ تحلیل

لکھنو 22 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) لوک سبھا انتخابات میں شکست کے پیش نظر 36 سینئر لیڈرس کے خلاف کارروائی کے چند دن بعد سماجوادی پارٹی نے آج اپنی اتر پردیش یونٹ اور اس سے ملحقہ دیگر 15 یونٹوں کو تحلیل کردیا ہے ۔ چیف منسٹر اکھیلیش یادو تاہم پارٹی کے ریاستی صدر کی حیثیت سے برقرار رہیں گے ۔ سماجوادی پارٹی کے ترجمان راجیندر چودھری نے یہ بات بتائی

لکھنو 22 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) لوک سبھا انتخابات میں شکست کے پیش نظر 36 سینئر لیڈرس کے خلاف کارروائی کے چند دن بعد سماجوادی پارٹی نے آج اپنی اتر پردیش یونٹ اور اس سے ملحقہ دیگر 15 یونٹوں کو تحلیل کردیا ہے ۔ چیف منسٹر اکھیلیش یادو تاہم پارٹی کے ریاستی صدر کی حیثیت سے برقرار رہیں گے ۔ سماجوادی پارٹی کے ترجمان راجیندر چودھری نے یہ بات بتائی ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی کی ریاستی یونٹ اور اس سے ملحقہ 15 یونٹوں کو پارٹی سربراہ ملائم سنگھ یادو کی ہدایت پر تحلیل کردیا گیا ہے ۔ 15 یونٹوں کے صدور اور دیگر عہدیداروں کو برخواست کردیا گیا ہے ۔ اتر پردیش کی 80 لوک سبھا نشستوں میں سماجوادی پارٹی صرف پانچ تک محدود رہ گئی ہے جبکہ اسے 2009 میں 23 نشستوں سے کامیابی حاصل ہوئی تھی ۔ بی جے پی اور اس کی حلیف جماعت اپنا دل کو یہاں 73 نشستوں پر کامیابی ملی ہے ۔ کانگریس صرف دو نشستیں حاصل کرسکی ہے ۔

جن پانچ نشستوں پر سماجوادی پارٹی کو کامیابی ملی ان میں ملائم سنگھ یادو دو نشستوں مین پوری اور اعظم گڑھ سے کامیاب ہوئے ہیں ۔ مابقی تین میں قنوج ‘ بدایون اور فیروز آباد سے ملائم سنگھ یادو کی بہو ڈمپل یادو اور ان کے بھانجے دھرمیندر یادو اور اکشے یادو کامیاب ہوئے ہیں۔ پارٹی انتخابات کے نتائج کا اعلان ہونے کے بعد سے اب تک پارٹی کی کارکردگی کا جائزہ لینے میں مصروف ہے ۔ ملائم سنگھ یادو اور اکھیلیش سنگھ یادو دونوں نے ہی شکست خوردہ امیدواروں اور ضلع صدور سے علیحدہ علیحدہ ملاقتیں کی ہیں اور ریاستی حکومت کیوزرا سے بھی بات چیت کی گئی ہے ۔پارٹی نے ریاستی حکومت میں منسٹر آف اسٹیٹ درجہ رکھنے والے 36 قائدین کو برطرف کردیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT