Saturday , December 16 2017
Home / سیاسیات / سماج ‘ رام مندر کی تعمیر کیلئے تیار ہوجائے ‘ بھاگوت

سماج ‘ رام مندر کی تعمیر کیلئے تیار ہوجائے ‘ بھاگوت

1990 میں ہلاک کارسیوکوں سے جذبہ حاصل کیا جائے : آر ایس ایس سربراہ کے ٹوئیٹس
نئی دہلی 3 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت نے آج سماج سے کہا کہ وہ گجرات میں سومناتھ مندر کی طرح ایودھیا میں ایک بڑا رام مندر بنانے کیلئے تیار ہوجائے ۔ بھاگوت کے اس اعلان کو چیف منسٹر بہار نتیش کمار نے مسترد کردیا ہے اور کہا کہ بی جے پی اس مسئلہ کو سیاسی مقاصد کیلئے زندہ رکھنا چاہتی ہے ۔ بھاگوت کی جانب سے کل کولکتہ میں اس امید کا اظہار کئے جانے کے بعد کہ ان کی زندگی میں رام مندر تعمیر کردیا جائیگا آر ایس ایس نے آج کئی ٹوئیٹس کرتے ہوئے بھاگوت کا حوالہ دیا ۔ بھاگوت نے کہا کہ سومناتھ مندر کو اس وقت کے وزیر داخلہ سردار پٹیل کی کوششوں سے دوبارہ تعمیر کیا گیا تھا اور اس وقت کے صدر جمہوریہ نے مندر کا سنگ بنیاد رکھا تھا ۔ اپنے ٹوئیٹ میں موہن بھاگوت نے کہا کہ ہندوستان مذہب و تہذیبی ورثہ کا حامل ہے ۔ رام ہمارے آئیڈیل ہیں جنہیں کچھ لوگ خدا مانتے ہیں اور کچھ ایک عظیم شخصیت ۔ سماج کو چاہئے کہ وہ رام اور شرد کوٹھاری سے حوصلہ حاصل کرتے ہوئے سومناتھ کی طرح ایک وسیع رام مندر تعمیر کرنے کیلئے تیار ہوجائے ۔

رام اور شرد کوٹھاری ان آر ایس ایس کارکنوں میں شامل تھے جو 1990 میں کارسیوا کے دوران کی گئی پولیس فائرنگ میں ہلاک ہوگئے تھے ۔ اس وقت یہ لوگ ایودھیا میں بابری مسجد کے مقام تک پہونچنا چاہتے تھے ۔ بھاگوت نے کل کولکتہ میں کہا تھا کہ یہ عظیم مقصد خود ہمارے اپنے وقت میں پورا ہوسکتا ہے اور ہم خود اپنی آنکھیوں سے اسے دیکھ پائیں گے ۔ بی جے پی نے موہن بھاگوت کے ریمارکس پر اپنے رد عمل میں کہا کہ یقینی طور پر کسی وقت رام مندر تعمیر ہوگا ۔ مرکزی وزیر نرملا سیتارامن نے کہا کہ کسی وقت ضرور رام مندر تعمیر ہوگا ۔ اس سوال پر کہ آیا یہ رام مندر نریندر مودی حکومت کے دور میں تعمیر ہوجائیگا انہوں نے کہا کہ وہ نہیں جانتیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوئی نیا بیان نہیں ہے ۔ کئی موقعوں پر یہ بیان دیا گیا ہے اور بی جے پی مانتی ہے کہ کسی نہ کسی وقت رام مندر کو تعمیر ہونا چاہئے ۔ اس دوران چیف منسٹر بہار نتیش کمار نے آر ایس ایس اور بی جے پی کے بیان پر تنقید کی ہے اور کہا کہ بی جے اپنے سیاسی مفادات کی تکمیل کیلئے یہ مسئلہ زندہ رکھنا چاہتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ صرف یہ مسئلہ زندہ رکھنا چاہتے ہیں ان کے پاس رام کا کوئی احترام نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ لارڈ رام کو بی جے پی کا ایک رکن ہی مانتے ہیں۔ حالیہ عرصہ میں رام مندر کے تعلق سے بیانات میں ہندوتوا طاقتوں نے اضافہ کردیا ہے ۔

 

مندر سب کی مرضی سے بننا چاہئے ‘ روی شنکر
نئی دہلی 3 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) روحانی رہنما سری سری روی شنکر نے آج ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے مطالبہ کی تائید کی تاہم انہوں نے کہا کہ یہ مندر سب کی مرضی سے بننا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ رام مندر ایودھیا میں تعمیر کی جانی چاہئے تاہم اس کیلئے سب کی منظوری کی ضرورت ہے ۔ آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت کی جانب سے رام مندر تعمیر کرنے سے متعلق ریمارکس پر سوال کا جواب دیتے ہوئے روی شنکر نے کہا کہ یہ ان کا ایجنڈہ ہے اور وہ اس پر کچھ نہ کچھ کہتے رہیں گے ۔ پنڈت روی شنکر نے آج ایک تقریب کے موقع پر اس خیال کا اظہار کیا ۔ انہوں نے ہندوستانی نوجوانوں کی آئی ایس آئی ایس میں شمولیت کے خطرات کو روکنے کیلئے شعور کی بیداری پر زور دیا ۔ انہوں نے کہا کہ جب کبھی نوجوانوں کے ذہنوں میں خوف ‘ دہشت  کا ماحول پیدا ہوجاتا ہے تو وہ گمراہ ہوجاتے ہیں۔ ایسے میں یہ ضروری ہے کہ عوام میں اعتماد پیدا کیا جائے ۔ یہ وقت کی اہم ضرورت ہے کہ عوام کو ایک دوسرے کے ساتھ بقائے باہم کے اصولوں پر رہنے کے تعلق سے باشعور کیا جائے ۔ ملک میں عدم رواداری پر جاری مباحث کے تعلق سے انہوں نے کہا کہ مختلف مذاہب کے مذۃبی قائدین کی جانب سے رواداری پر ایک مشترکہ بیان جاری کئے جانے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مذہبی قائدین کو چاہئے کہ وہ یکجا ہوں اور تحمل و رواداری پر مشترکہ بیان دیں۔

TOPPOPULARRECENT