Monday , January 22 2018
Home / سیاسیات / سمترا مہاجن لوک سبھا اسپیکر ہونگی ‘ آج رسمی انتخاب

سمترا مہاجن لوک سبھا اسپیکر ہونگی ‘ آج رسمی انتخاب

نئی دہلی 5 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) بی جے پی لیڈر سمترا مہارجن 16 ویں لوک سبھا کی اسپیکر ہونگے جبکہ تمام جماعتوں کے سینئر قائدین بشمول وزیر اعظم نریندر مودی نے اس عہدہ کیلئے ایوان میں ان کے نام کی تجویز پیش کی تھی ۔ آج دو پہر تک اسپیکر کے عہدہ کیلئے پرچہ داخل کرنے کی مہلت تھی اور اس وقت تک صرف سمترا مہاجن کا نام ہی پیش کیا گیا تھا ۔ ان کا رسمی

نئی دہلی 5 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) بی جے پی لیڈر سمترا مہارجن 16 ویں لوک سبھا کی اسپیکر ہونگے جبکہ تمام جماعتوں کے سینئر قائدین بشمول وزیر اعظم نریندر مودی نے اس عہدہ کیلئے ایوان میں ان کے نام کی تجویز پیش کی تھی ۔ آج دو پہر تک اسپیکر کے عہدہ کیلئے پرچہ داخل کرنے کی مہلت تھی اور اس وقت تک صرف سمترا مہاجن کا نام ہی پیش کیا گیا تھا ۔ ان کا رسمی انتخاب کل عمل میں آئیگا ۔ تمام اپوزیشن قائدین بشمول لوک سبھا میں کانگریس لیڈر ملکارجن کھرگے ‘ ایم تھمبی دورائی (آل انڈیا انا ڈی ایم ) سدیپ بندو پادھیائے ( ترنمول کانگریس ) بی مہتاب ( بی جے ڈی ) ملائم سنگھ یادو ( سماجوادی پارٹی ) ایچ ڈی دیوے گوڑا ( جے ڈی ایس ) سپریہ سولے ( این سی پی ) محمد سلیم ( سی پی ایم ) اور جتیندر ریڈی ( ٹی آر ایس ) سمترا مہاجن کے نام کی تجویز کرنے والے 19 ارکان میں شامل ہیں۔ 72 سالہ سمترا مہاجن اندور سے آٹھویں مرتبہ لوک سبھا کیلئے منتخب ہوئی ہیں اور وہ ایوان کی صدر نشین کے پیانل میں کام کرچکی ہیں۔

وزیر اعظم کے علاوہ جن دوسرے بی جے پی قائدین نے سمترا مہاجن کے نام کی تجویز پیش کی ان میں راج ناتھ سنگھ اور سشما سواراج بھی شامل ہیں۔ وزیر اعظم مودی کی پیش کردہ تجویز کی بی جے پی کے سینئر لیڈر ایل کے اڈوانی نے حمایت کی جبکہ راج ناتھ سنگھ کی پیش کردہ تجویز کی منسٹر آف اسٹیٹ پارلیمانی امور سنتوش گنگوار نے تائید کی ۔ سما سواراج کی پیش کردہ تجویز کی بی جے پی لیڈر گری راج سنگھ نے حمایت کی ہے ۔ برسر اقتدار این ڈی اے میں سمتار مہاجن کے نام کی تجویز کرنے والوں میں ایل جے پی کے رام ولاس پاسوان ‘ شوسینا کے اننت گیتے ‘ تلگودیشم کے ٹی نرسمہم اور اکالی دل کی ہرسمراٹ کور بادل شامل ہیں۔ سمترا مہاجن اپنے نرم خو رویہ کی وجہ سے جانی چاتی ہیں اور تمام جماعتوں سے ان کے تعلقات خوشگوار ہیں۔

سمجھا جارہا ہے کہ آل انڈیا انا ڈی ایم کے کے رکن مسٹر ایم تھمبی دورائی کو ڈپٹی اسپیکر بنایا جاسکتا ہے ۔ واضح رہے کہ انا ڈی ایم کے کی سربراہ جئے للیتا نے دو دن قبل وزیر اعظم سے تفصیلی بات چیت کی تھی ۔ انا ڈی ایم کے ارکان پارلیمنٹ نے حال ہی میں مسٹر تمبھی دورائی کو پارلیمانی پارٹی لیڈر منتخب کرلیا تھا ۔ تھمبی دورائی لوک سبھا حلقہ کرور کی نمائندگی کریت ہیں۔ وہ اس سے قبل 1985 اور 1989 میں بھی ڈپٹی اسپیکر رہ چکے ہیں۔ چونکہ بی جے پی زیر قیادت این ڈی اے کو راجیہ سبھا میں اکثریت حاصل نہیں ہے اس لئے وہ چاہتی ہے کہ دوسری جماعتوں کی بھی تائید حاصل کی جاسکے ۔ اسی لئے آل انڈیا انا ڈی ایم کے کو رجھانے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ جئے للیتا کی پارٹی کے راجیہ سبھا میں دس ارکان ہیں۔ ابھی تک اس سلسلہ میں تاہم بی جے پی یا انا ڈی ایم کے کی جانب سے کچھ بھی نہیں کہا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT