سمرتی ایرانی نجومی سے رجوع ہونے پر پارلیمنٹ میں اعتراض

نئی دہلی ۔ 10 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیرفروغ انسانی وسائل سمرتی ایرانی کے ایک نجومی کے پاس جانے کا معاملہ آج راجیہ سبھا میں ایک کانگریس رکن نے اٹھایا اور کہا کہ یہ انہیں تفویض کی گئی ذمہ داری کے شایان شان نہیں ہے لیکن انہوں نے ترکی بہ ترکی جواب دیتے ہوئے کہا کہ وہ دستور کے مطابق شخصی زندگی میں اپنے عقیدہ پر عمل کرسکتی ہیں۔ کانگریس ایم شانتارام نائیک نے کہا کہ ان کی تعلیمی قابلیتوں کو ’’چیلنج‘‘ کئے جانے کے باوجود سمرتی نے وزیر کی حیثیت سے اچھی کارکردگی دکھائی ہے۔ تاہم، ’’مجھے یہ دیکھ کر تکلیف ہوئی کہ آپ نجومی کے پاس جاتے ہو … اس سے سائنسی تاثر پر ضرب لگتی ہے جو دستور ہند میں پنہاں ہے‘‘ کانگریسی رکن نے یہ ریمارکس کئے جبکہ وہ اسکول آف پلاننگ اینڈ آرکیٹکچر کے بارے میں بل پر مباحث میں حصہ لے رہے تھے۔ نائیک نے کہا : ’’(وزیر کے طور پر) آپ کی کوئی نجی زندگی نہیں ہوتی ہے ۔ مجھے رنج ہے کہ آپ نجومی کے پاس گئے ہو، آپ اسٹوڈنٹس کو کیا پیام دو گے کہ مستقبل کا حال بتانے والے کے پاس جاؤ ۔ جو پیام آپ نے دیا ہے وہ آپ کو دی گئی ذمہ داری کے ساتھ میل نہیں کھا

TOPPOPULARRECENT