Wednesday , September 26 2018
Home / کھیل کی خبریں / سمیع کے خلاف انٹی کرپشن یونٹ کی تحقیقات کا امکان

سمیع کے خلاف انٹی کرپشن یونٹ کی تحقیقات کا امکان

کولکتہ۔14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام )ہندوستانی فاسٹ بولر محمد سمیع کی مشکلات میں آج ایک اور اضافہ ہوگیا ہے جیسا کہ انکی بیوی حسین جہاں نے فاسٹ بولر پر الزام لگایا ہے کہ انہوں نے فون پر انہیں دھمکیاں دی ہے نیز جہاں نے بنگال کی چیف منسٹر ممتا بنرجی سے اس تنازعہ میں مدد طلب کی ہے اور کہا ہے کہ محمد سمیع نے اپنے فون سے کسی اور کے ذریعہ میسج کیا ہے اور بیبو(بیٹی عائرہ) سے بات کرنے چاہتے ہیں۔دوسری جانب سمیع نے جہاں سے ہوئی گفتگو کا آڈیو جاری کردیا ہے۔نیز ان پر فکسنگ کے الزامات کی تحقیقات اب بی سی سی آئی کی انٹی کرپشن یونٹ کی جانب سے کی جائیں گی۔ قبل ازیں کولکتہ پولیس نے محمد سمیع کے خلاف کارروائی تیز کرتے ہوئے ان کا موبائل فون قبضے میں لے لیا تھا۔ یہ وہی موبائل ہے جس کے بارے میں کرکٹر کی اہلیہ حسین جہاں نے دعویٰ کیاکہ وہ اس سے غیرعورتوں سے رابطہ کرتے تھے، انھیں یہ موبائل سمیع کی بی ایم ڈبلیو گاڑی سے ملا تھا، جس کی وجہ سے ان میں لڑائی شروع ہوئی۔پولیس ذرائع نے کہا ہے کہ اس موبائل کو فارنسک ٹسٹ کیلئے بھیجا جائے گا،اس میں استعمال ہونے والے نیٹ ورک اور مختلف ایپس کا بھی جائزہ لے کر یہ جاننے کی کوشش ہوگی کہ سمیع کے کس کس سے رابطے تھے۔ دوسری جہاں ایک رپورٹر سے الجھ پڑیں جس نے ان پر کیمرہ توڑنے کا الزام عائد کردیا۔اپنے خاوند پر الزامات کی بھرمار کرنے والی حسین جہاں کی ایک ویڈیو سامنے آئی جس میں کچھ رپورٹرز اور کیمرہ مینز کو ان کے پیچھے جاتا ہوا دکھایا گیا ہے، جس پر وہ بعد میں غصے میں آجاتی ہیں اور گاڑی میں بیٹھتے ہوئے ان کی ایک رپورٹر کے ساتھ بحث بھی ہوتی ہے لیکن یہ واضح نہیں ہوسکا کہ انھوں نے مذکورہ رپورٹر کو دھکہ دیا،رپورٹر نے دعویٰ کیاکہ حسین جہاں نے ان کا کیمرہ بھی توڑدیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT