Thursday , June 21 2018
Home / تفریح / سنجے دت کی پیرول پر رہائی میں مرکز کا کوئی رول نہیں

سنجے دت کی پیرول پر رہائی میں مرکز کا کوئی رول نہیں

نئی دہلی ۔ 10 ۔ مارچ : ( سیاست ڈاٹ کام ) : فلمی اداکار سنجے دت کی وقفہ وقفہ سے پیرول پر رہائی میں مرکزی حکومت کا کوئی رول نہیں ہے اور کوئی بھی قیدی عدالت اور متعلقہ ریاستی حکومت کی منظوری سے یہ سہولت حاصل کرسکتا ہے ۔ لوک سبھا میں آج یہ اطلاع دی گئی وقفہ صفر کے دوران یہ مسئلہ اٹھاتے ہوئے شیوسینا رکن راہل شیوالے نے الزام عائد کیا کہ سنجے دت

نئی دہلی ۔ 10 ۔ مارچ : ( سیاست ڈاٹ کام ) : فلمی اداکار سنجے دت کی وقفہ وقفہ سے پیرول پر رہائی میں مرکزی حکومت کا کوئی رول نہیں ہے اور کوئی بھی قیدی عدالت اور متعلقہ ریاستی حکومت کی منظوری سے یہ سہولت حاصل کرسکتا ہے ۔ لوک سبھا میں آج یہ اطلاع دی گئی وقفہ صفر کے دوران یہ مسئلہ اٹھاتے ہوئے شیوسینا رکن راہل شیوالے نے الزام عائد کیا کہ سنجے دت وقفہ وقفہ سے جیل سے باہر آکر پیرول کی سہولت کا بیجا استعمال کررہے ہیں ۔ انہوں نے اس طرح کا رجحان روکنے کے لیے اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ۔

تاہم مملکتی وزیر داخلہ کرن رجیجو نے کہا کہ کسی بھی قیدی کی جانب سے پیرول کی سہولت سے استفادہ میں مرکز کا کوئی رول نہیں ہے کیوں کہ یہ فیصلہ متعلقہ ریاستی حکومتیں اور عدالتیں کرتی ہیں ۔ انہوں نے فلمی اداکار کا نام لیے بغیر کہا کہ اگر کوئی پیرول کی سہولت کا بیجا فائدہ اٹھاتا ہے تو ہم کچھ نہیں کرسکتے ۔ جب کہ سنجے دت کو 1993 کے ممبئی بم دھماکے کیس میں غیر قانونی طریقہ اسلحہ رکھنے کے الزام میں 5 سال کی سزائے قید ہوئی ہے ۔

کانگریس رکن گورو گوگوئی کے ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے مسٹر رجیجو نے کہا کہ ویماپور جیسے واقعات کا اعادہ نہ ہونے کے لیے اقدامات کرنے ریاستی حکومتوں کو ہدایات جاری کی جائیں گی ۔ جب کہ دیماپور میں ایک ہجوم نے گذشتہ ہفتہ جیل سے ایک عصمت ریزی کے ملزم کو گھسیٹتے ہوئے باہر لاکر ماردیا تھا ۔ انہوں نے بتایا کہ ملک کی جیلوں میں گنجائش سے زیادہ قیدی ہوگئے ہیں اور قیدیوں کی تعداد گھٹانے کے لیے حکومت کوشش کررہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بیشتر ریاستی حکومتیں جیل مینول پر عمل نہیں کررہی ہے جب کہ مرکزی حکومت نے جیل میں اصلاحات اور قیدیوں کی حالت کو بہتر بنانے کے لیے ہدایات جاری کئے جاتے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT