Tuesday , December 12 2017
Home / کھیل کی خبریں / سندھو کو 39 لاکھ، مارین 61.5 لاکھ کیساتھ مہنگی کھلاڑی

سندھو کو 39 لاکھ، مارین 61.5 لاکھ کیساتھ مہنگی کھلاڑی

پریمیئر بیڈمنٹن لیگ کے دوسرے ایڈیشن کیلئے نیلامی ۔ سائنا کو 33 لاکھ ، سریکانت کو 51 لاکھ روپئے کی قیمت ملی

نئی دہلی، 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) لندن اولمپکس میں چاندی کا تمغہ جیت کر تاریخ رقم کرنے والی اسٹار بیڈمنٹن کھلاڑی پی وی سندھو کو پریمیئر بیڈمنٹن لیگ (پی بی ایل) کے دوسرے ایڈیشن کیلئے آج منعقدہ نیلامی میں حیرت انگیز طور پر 39 لاکھ روپے کی کم قیمت ملی جبکہ اولمپک گولڈ میڈل ونر اسپین کی کیرولینا مارین 61.5 لاکھ روپے کی قیمت کے ساتھ سب سے مہنگی کھلاڑی بن گئیں۔ پی بی ایل کے دوسرے سیزن کی نیلامی میں ہندوستان کے ٹاپ مرد کھلاڑی کندمبی سریکانت کو 51 لاکھ روپے کی قیمت ملی جبکہ ریو میں پہلے راؤنڈ میں باہر ہونے والی سائنا نہوال کو 33 لاکھ روپے کی قیمت ملی۔سونگ جی ہیون کو 60 لاکھ روپے اور جان جورگنسن کو 59 لاکھ روپے ملے ۔ سندھو کو چنئی اسمیشرس نے مسلسل دوسرے سیزن میں اپنی ٹیم میں برقرار رکھا۔نیلامی کے بعد پریس کانفرنس میں سب سے بڑا سوال یہی تھا کہ اولمپک سلور میڈلسٹ ہونے کے باوجود سندھو کو اتنی کم قیمت کیونکر ملی۔ نیوز ایجنسی ’یواین آئی‘ نے سب سے پہلے اس سوال کو اٹھایا۔اس پر خود سندھو نے کہا کہ ہمارے لئے کھیل زیادہ معنی رکھتا ہے، قیمت نہیں۔ دوسری طرف ٹیم مالکان نے مانا کہ سندھو انڈیا کی سب سے بڑی آئیکان کھلاڑی ہیں لیکن 39 لاکھ کی قیمت پر بعض ٹیم مالکان نے کہا کہ دراصل یہ نیلامی کا عمل ہے ۔اس میں سندھو کا نام سب سے پیچھے تھا اور جب تک نیلامی سندھو تک پہنچتی بہت ٹیموں کا بجٹ کافی ختم ہو چکا تھا۔ شاید یہی وجہ ہے کہ سندھو کو توقعات سے کم قیمت ملی۔ پی بی ایل کا دوسرا سیزن یکم جنوری سے حیدرآباد میں شروع ہوگا اور اس کا فائنل 14 جنوری کو ہوگا۔نیلامی میں ہر ٹیم کے پاس 1.93 کروڑ روپے کا بجٹ تھا اور ہر ٹیم کو 10 کھلاڑیوں کو خریدنا تھا۔ہر ٹیم میں ایک آئکن کھلاڑی اور زیادہ سے زیادہ چھ غیر ملکی کھلاڑی رکھے جانے تھے ۔لیگ میں کل چھ کروڑ روپے کی انعامی رقم دی جائے گی جس میں فاتح کو تین کروڑ اور رنر اپ کو ڈیڑھ کروڑ روپے ملیں گے ۔ پی بی ایل کے گزشتہ سیزن میں سائنا آئیکان کھلاڑی تھیں لیکن ریو اولمپکس کی ان کی خراب کارکردگی اور گھٹنے کی چوٹ کے بعد ان کی سرجری کو دیکھتے ہوئے نیلامی کے پہلے دور میں کسی بھی فرنچائز نے سائنا کو نہیں خریدا۔

TOPPOPULARRECENT