Saturday , December 15 2018

سنندا پشکر کی موت : دہلی پولیس میں قتل کا مقدمہ درج، ششی تھرور حیران

نئی دہلی، 6 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ششی تھرور کی بیوی سنندا پشکر کی موت کو ایک سنسنی خیز موڑ دیتے ہوئے دہلی پولیس نے آج قتل کا مقدمہ ایک میڈیکل رپورٹ کی اساس پر درج رجسٹر کرلیا، جس میں نتیجہ اخذ کیا گیا کہ اُن کی موت غیر طبعی اور زہر کے سبب ہوئی لیکن ابھی تک کسی کو بھی مشتبہ ملزم نہیں بنایا گیا ہے۔ یہ انکشاف کرتے ہوئے دہلی پولیس کمشنر بی ا

نئی دہلی، 6 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ششی تھرور کی بیوی سنندا پشکر کی موت کو ایک سنسنی خیز موڑ دیتے ہوئے دہلی پولیس نے آج قتل کا مقدمہ ایک میڈیکل رپورٹ کی اساس پر درج رجسٹر کرلیا، جس میں نتیجہ اخذ کیا گیا کہ اُن کی موت غیر طبعی اور زہر کے سبب ہوئی لیکن ابھی تک کسی کو بھی مشتبہ ملزم نہیں بنایا گیا ہے۔ یہ انکشاف کرتے ہوئے دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسّی نے تھرور سے پوچھ گچھ کے امکان کو مسترد نہیں کیا، جو موجودہ طور پر کانگریس ایم پی اور سابق مرکزی وزیر اور فی الحال کانگریسی رکن پارلیمنٹ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ واضح نہیں ہوسکا کہ سنندا نے اپنے طور پر زہر استعمال کیا تھا

یا اُنھیں زبردستی زہر پلایا گیا یا انجکشن کے ذریعہ زہر دیا گیا تھا۔ 51 سالہ سنندا 17 جنوری کو ایک لکژری ہوٹل میں مردہ پائی گئی تھیں۔ پولیس نے اب تعزیرات ہند کی دفعہ 302 کے تحت قتل کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔ دہلی پولیس کی کارروائی پر ’’حیران‘‘ تھرور جنہوں نے سنندا سے 2010 ء میں شادی کی تھی ، تحقیقات کاروں سے مکمل تفصیلات مانگے ہیں جن کی اساس پر پولیس کی کارروائی عمل میں آئی ہے ۔ تھرور نے ایک بیان میں کہا ، ’’ میں یہ سن کر حیران ہوں کہ دہلی پولیس نے میری آنجہانی بیوی سنندا کی موت کے معاملے میں نامعلوم اشخاص کے خلاف قتل کا کیس درج کرلیا ہے ۔ یہ کہنے کی ضرورت نہیں کہ میں اس کیس کی جامع تحقیقات کا بے چینی سے منتظر ہوں اور پولیس کو میرا مکمل تعاون جاری رہنے کا یقین دلاتا ہوں‘‘۔ اس دوران کانگریس ترجمان ابھیشیک سنگھوی نے کہا کہ موت کے ایک سال بعد کیس درج رجسٹر کرنا سوالیہ نشان کھڑا کرتا ہے اور مشتبہ کارروائی معلوم ہوتی ہے ۔

سنندا پشکر کے خون کے نمونے بیرون ملک روانہ
اس دوران سنندا پشکر کے خون کے نمونوں کو جامع معائنے اور جانچ کیلئے بیرون ملک روانہ کردیا گیا ہے ۔دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسّی نے کہاکہ سنندا کی موت نے سنسنی پھیلادی تھی اور ٹوئٹر پر اُن کے شوہر ششی تھرور کے پاکستانی صحافی مہر تارڑ کے ساتھ عشق کی داستانوں نے اِس میں مزید شدت پیدا کردی تھی۔ 29 ڈسمبر کو ایمس کے میڈیکل بورڈ نے رپورٹ پیش کی تھی جس کا کلیدی نکتہ یہ تھا کہ اُن کی موت غیر طبعی تھی، فطری نہیں تھی۔ دوسری بات یہ تھی کہ یہ اطلاع دی گئی تھی کہ اُنھوں نے یا تو زہر کھایا تھا یا اُنھیں انجکشن کے ذریعہ زہر دیا گیا تھا۔ پولیس کمشنر بسی نے کہاکہ حالانکہ زہر کی نوعیت اور مقدار کا پتہ چلانے کیلئے معائنے کئے گئے تھے لیکن اِس کا تعین نہیں کیا جاسکا ، اِس لئے اُن کے نمونے بیرون ملک معائنے کیلئے روانہ کردیئے گئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT