Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف میناریٹی کو اسکیمات پر عمل آوری کی اجازت

سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف میناریٹی کو اسکیمات پر عمل آوری کی اجازت

تین اسکیمات کو منظوری ، حکومت کے احکامات ، رجسٹرار عثمانیہ یونیورسٹی اور ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کو ہدایت

تین اسکیمات کو منظوری ، حکومت کے احکامات ، رجسٹرار عثمانیہ یونیورسٹی اور ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کو ہدایت
حیدرآباد ۔ /20 فبروری، ( سیاست نیوز) حکومت نے سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف میناریٹی کو تین اسکیمات پر عمل آوری کی اجازت دے دی ہے جس پر 3کروڑ روپئے خرچ ہوں گے۔ اس سلسلہ میں آج باقاعدہ احکامات جاری کئے گئے۔ حکومت نے ڈائرکٹر سی ای ڈی ایم کی روانہ کردہ تجویز سے اتفاق کرتے ہوئے ان اسکیمات کو منظوری دی جن میں اقلیتی طلبہ کے تعلیمی مظاہرہ کو بہتر بنانا، داخلوں سے متعلق مسابقتی امتحانات میں اقلیتوں کی حصہ داری میں اضافہ اور اقلیتی امیدواروں کو روزگار سے متعلق مسابقتی امتحانات میں کوچنگ شامل ہیں۔ پہلی اور دوسری اسکیمات کیلئے بجٹ میں فی کس ایک کروڑ 20لاکھ روپئے مختص کئے گئے جبکہ روزگار سے مربوط مسابقتی امتحانات میں کوچنگ پر 60لاکھ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ ڈائرکٹر سی ای ڈی ایم نے اسکیمات کی تفصیل اور بجٹ کے استعمال سے متعلق تجاویز حکومت کو روانہ کرتے ہوئے منظوری کی درخواست کی تھی۔ حکومت نے سی ای ڈی ایم کو ان اسکیمات پر عمل آوری کی اجازت دیتے ہوئے رجسٹرار عثمانیہ یونیورسٹی اور ڈائرکٹر اقلیتی بہبود سے خواہش کی کہ وہ ان اسکیمات پر موثر عمل آوری کو یقینی بنائیں۔ واضح رہے کہ جاریہ سال حکومت نے سی ای ڈی ایم بجٹ میں 3کروڑ روپئے مختص کئے تھے جن میں سے صرف 85لاکھ روپئے ہی جاری کئے گئے۔ گزشتہ سال حکومت نے اقلیتی فینانس کارپوریشن سے 70لاکھ روپئے سی ای ڈی ایم کو حوالے کئے تاکہ اقلیتی طلبہ کی سیول سرویسس امتحانات میں کوچنگ کی اسکیم پر عمل آوری کی جائے۔ گزشتہ سال اس کوچنگ کے بعد بجٹ کا کچھ حصہ باقی رہ گیا تھا جسے جاریہ سال کی اسکیم پر خرچ کیا جائے گا۔ اسی دوران ڈائرکٹر سی ای ڈی ایم پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ اقلیتی طلبہ کو سیول سرویسس امتحانات کی کوچنگ کا3مارچ سے آغاز ہورہا ہے۔ تلنگانہ کے 100 طلبہ کا اس کوچنگ کیلئے انتخاب کیا گیا تھا اور معروف ادارہ حیدرآباد اسٹڈی سرکل کے ذریعہ کوچنگ دی جائے گی۔ گزشتہ سال کوچنگ میں 3 طلباء ابتدائی مرحلہ کیلئے منتخب ہوئے تھے۔ جاریہ سال اس بات کی کوشش کی جارہی ہے کہ زیادہ سے زیادہ طلبہ کے سیول سرویسس امتحانات میں کامیابی کو یقینی بنایا جائے۔ سی ای ڈی ایم کی جانب سے اس کوچنگ کیلئے حیدرآباد اسٹڈی سرکل کو فی طالب علم 25ہزار روپئے ادا کئے جائیں گے اور یہ کوچنگ 6ماہ پر مشتمل ہوگی۔ آئندہ سال سے کوچنگ کے نظم میں تبدیلی کا منصوبہ ہے تاکہ قابل اور اہل طلبہ کا انتخاب کرتے ہوئے مزید بہتر کوچنگ دی جاسکے۔ حکومت طلبہ کے انتخاب کے سلسلہ میں شرائط میں تبدیلی پر بھی غور کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT