Thursday , June 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / سنگاریڈی کے 40مسلم نوجوانوںکی عدالت میں کامیاب پیروی

سنگاریڈی کے 40مسلم نوجوانوںکی عدالت میں کامیاب پیروی

سنگاریڈی ۔15مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سنگاریڈی میں سال 2012ء میں پیش آئے فرقہ واری فسادات میں پولیس نے 40سے زائد مسلم نوجوانوں پر مختلف دفعات کے تحت کئی ایک کیسوں میں ماخوذ کیا تھا ‘ تین سال تک مقدمات چلنے کے بعد عدالت نے تمام مسلم نوجوانوں کو بے گناہ و بے قصور قرار دیتے ہوئے تمام الزامات منسوبہ سے باعزت بری کردیا ۔ مسلم نوجوانوں کی مقد

سنگاریڈی ۔15مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سنگاریڈی میں سال 2012ء میں پیش آئے فرقہ واری فسادات میں پولیس نے 40سے زائد مسلم نوجوانوں پر مختلف دفعات کے تحت کئی ایک کیسوں میں ماخوذ کیا تھا ‘ تین سال تک مقدمات چلنے کے بعد عدالت نے تمام مسلم نوجوانوں کو بے گناہ و بے قصور قرار دیتے ہوئے تمام الزامات منسوبہ سے باعزت بری کردیا ۔ مسلم نوجوانوں کی مقدمات سے باعزت بری ہونے کا مسلمانان سنگاریڈی کی جانب سے زبردست خیرمقدم کیا جارہا ہے ۔ بری ہونے والے نوجوانوں اور وکلاء کی گلپوشی و تہنیت پیش کی جارہی ہے ۔ مسجد حسنین انتظامی کمیٹی کی جانب سے بعد نماز جمعہ مسجد حسنین کالونی سنگاریڈی میں جناب محمد یوسف الدین صدر انتظامی کمیٹی کی زیر صدارت جناب خواجہ ارشد الدین ایڈوکیٹ ‘ ایم اے سمیع سابق رکن بلدیہ اور محمد خواجہ صدر مرکزی میلاد کمیٹی سنگاریڈی کی تہنیتی تقریب منعقد ہوئی ۔ تقریب میں مسجد کمیٹی کے علاوہ سنگاریڈی کے مختلف سیاسی ‘ سماجی ‘ مذہبی اور ملی تنظیموں کے قائدین کے علاوہ مسلم نوجوانوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی اور خواجہ ارشد الدین ایڈوکیٹ سے اظہار تشکر کرتے ہوئے ان کی بکثرت گلپوشی کی گئی ۔ حافظ شاہ عالم نے تقریب کی کارروائی چلائی ۔ اس موقع پر جناب ایم اے حکیم ایڈوکیٹ و سابق نائب صدر نشین اردو اکیڈیمی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 29مارچ 2012 کی شب سنگاریڈی میں فرقہ واری پرتشدد واقعات رونما ہوئے جو انتہائی بدبختانہ تھے ۔ فسادات میں مسلم دکانات کو نذرآتش کیا گیا ‘ ستم ظریقی یہ رہی کہ پولیس نے بے گناہ معصوم مسلم نوجوانوں کو ہی مختلف کیسوں میں ماخوذ کردیا لیکن عدالت نے تین سال بعد مسلم نوجوانوں کے ساتھ انصاف کرتے ہوئے انہیں باعزت بری کردیا ۔

انہوں نے خواجہ ارشد الدین ایڈوکیٹ کی ستائش کی اور کہا کہ نوجوان وکیل نے بہترین انداز میں کیسوں کی پیروی اور جراح کرتے ہوئے کامیابی سے ہمکنار کیا ۔ جناب محمد خواجہ صدر مرکزی میلاد کمیٹی سنگاریڈی نے کہا کہ فسادات کی شب وہ ایس پی سے ملاقات کرتے ہوئے امن و امان قائم کروانے کی کوشش کی تھی جبکہ پولیس نے غیر ضروری طور پر ان پر 15کیس درج کردیئے ۔ انہوں نے کہا کہ دوران مقدمات کہیں سے بھی مفت قانونی امداد حاصل نہیں ہوئی ۔ ان حالات میں خواجہ ارشد الدین ایڈوکیٹ نے ہمارے مقدمات بناء کسی فیس بالکل مفت لڑتے ہوئے کامیابی حاصل کی جس کلئے ہم سب ان کے مشکور ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سنگین مقدمات کی سماعت کے دوران خواجہ ارشد الدین ایڈوکیٹ نے کیس کی بہترین پیروی کی اور سب کی جانب سے کامیاب جرح کی ۔ جناب خواجہ ارشد الدین ایڈوکیٹ نے کامیابی کو مظلوم مسلم نوجوانوں کی کامیابی سے تعبیر کرتے ہوئے ملت اسلامیہ کی خدمت جاری رکھنے کا عزم ظاہر کیا ۔ ایم اے سمیع سابق رکن بلدیہ نے بھی خواجہ ارشد الدین ایڈوکیٹ کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ عدالت میں وکیل صاحب کی بروقت بہترین پیروی کی وجہ سے ہماری کامیابی ہوگئی ۔ اس موقع پرایم اے سبحان ‘ مجید خان ‘ معراج خان ‘ سید ذاکر حسین ‘ حبیب نوری ‘ ظہور الدین ‘ یوسف بن عمر ‘ ایم اے عزیز ‘ صابر ‘ جانی ‘ چاند بھائی ‘ شفیع الدین ‘ ہاشم ‘ نصیر اور دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT