Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / سنہرے تلنگانہ کا خواب دکھا کر ریاست کو مئے خانہ میں تبدیل کردیا گیا

سنہرے تلنگانہ کا خواب دکھا کر ریاست کو مئے خانہ میں تبدیل کردیا گیا

اسمبلی میں مطالبات زر مباحث کے دوران کانگریس رکن اسمبلی ملو بٹی وکرامارک کا الزام
حیدرآباد ۔ 20 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے رکن اسمبلی ملو بٹی وکرامارک نے سنہرے تلنگانہ کا خواب دیکھا کر ریاست کو مئے خانہ ( شراب خانہ ) میں تبدیل کردینے کا ٹی آر ایس حکومت پر الزام عائد کیا ۔ شراب پلا کر نئی نسل کی زندگیوں سے کھلواڑ کرنے کا دعویٰ کیا ۔ آج اسمبلی میں مطالبات زر مباحث میں حصہ لیتے ہوئے ملو بٹی وکرامارک نے کہا کہ ٹی آر ایس نے عام انتخابات میں عوام کو سنہرے تلنگانہ کے سپنے دکھائے تھے ۔ کامیابی کے بعد ریاست کو شراب خانے میں تبدیل کردیا گیا ۔ نشے کی حالت میں گاڑیاں چلانے سے ریاست میں بڑے پیمانے پر حادثات ہورہے ہیں جس میں سالانہ 1.46 لاکھ افراد ہلاک اور 10 لاکھ افراد زخمی ہورہے ہیں۔ نئی ریاست میں نوجوانوں کا مستقبل روشن بنانے کی حکمت عملی تیار کرنے کے بجائے انہیں شرابی بنایا جارہا ہے ۔ شراب کی فروخت سے سالانہ 19 ہزار کروڑ آمدنی حاصل کرنے کا حکومت نے منصوبہ بنایا ہے ۔ ریاست میں لا اینڈ آرڈر بگڑ چکا ہے ۔ سب انسپکٹرس آف پولیس پر ریت مافیا سے بڑے پیمانے پر کمیشن حاصل کرنے کا دباؤ بنایا جارہا ہے ۔ تاحال ریاست میں 6 سب انسپکٹرس نے خود کشی کرلی ہے ۔ ٹی آر ایس کا بجٹ حقائق سے دور ہے ۔ ایٹالہ راجندر نے چوتھی مرتبہ خسارے پر مشتمل بجٹ پیش کیا ہے ۔ ریاست میں زرعی بجٹ گھٹا دیا گیا ہے ۔ حکومت کی جانب سے ریاست میں سرمایہ کاری بڑھانے کا دعویٰ کیا جارہا ہے ۔ ریاست میں ہزاروں کسان خود کشی کرچکے ہیں اگر معیاری برقی سربراہ کی جارہی ہے تو غذائی اجناس کی پیداوار کیوں گھٹ رہی ہے اور کسان خود کشی کیوں کررہے ہیں ۔ حکومت اس کی وضاحت کریں ۔ کسانوں میں سبسیڈی پر تقسیم کیے جانے والے ٹریکٹرس میں بڑے پیمانے پر بدعنوانیاں ہورہی ہیں ۔ حکومت اس کی فوری تحقیقات کرائے ۔ جمہوریت میں حکمرانوں کی جتنی اہمیت ہوتی ہے اتنی ہی اہمیت اپوزیشن کی بھی ہوتی ہے ۔ کانگریس پر ویژن نہ ہونے کا جو الزام عائد کیا جارہا ہے ۔ وہ گھمنڈ اور تکبر کی علامت ہے ۔ سارے ملک میں ترقی کانگریس کے ویژن کا نتیجہ ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT