Tuesday , October 23 2018
Home / شہر کی خبریں / سنہرے تلنگانہ کا خواب چکنا چور

سنہرے تلنگانہ کا خواب چکنا چور

تلنگانہ بدعنوانیوں ، خود کشیوں کے واقعات میں ملک میں سرفہرست : پنالہ لکشمیا کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 19 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : سابق صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی پنالہ لکشمیا نے سنہرے تلنگانہ ریاست کے خواب کو چکنا چور کردینے کا چیف منسٹر کے سی آر پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ بدعنوانیوں ، قرضوں ، کسانوں کی خود کشی ، وعدوں سے انحراف میں ریاست تلنگانہ سارے ملک میں سرفہرست ہونے کا دعویٰ کیا ۔ آج گاندھی بھون میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پنالہ لکشمیا نے کہا کہ 60 سالہ جدوجہد ، نوجوانوں اور طلبہ کی قربانیوں کے بعد اس وقت کی صدر کانگریس سونیا گاندھی نے سماج کے تمام طبقات اور تمام شعبوں سے انصاف کرنے کے لیے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دیا تھا ۔ دلت کو چیف منسٹر بنانے ، مسلمانوں کو 12 فیصد ، قبائیلوں کو 10 فیصد تحفظات فراہم کرنے غریبوں کو ڈبل بیڈ روم مکانات ، دلتوں میں تین ایکڑ اراضی کی تقسیم کے وعدوں کو 4 سال بعد بھی پورا نہیں کیا گیا ۔ حکومت کی جانب سے ہر معاملے میں تلنگانہ سارے ملک میں سرفہرست ہونے کا جو دعویٰ کیا جارہا ہے وہ بے بنیاد ہے ۔ صرف سارے ملک میں ایک ہی خاندان کے راج میں تلنگانہ سرفہرست ہے ۔ ایک لاکھ کروڑ کا قرض حاصل کرنے اور عوام کو مقروض بنانے میں عوام کو بنیادی ، سماجی ، دستوری حقوق سے محروم کرنے دلتوں پر حملے ، خواتین پر مظالم ، کسانوں کی خود کشی ، زرعی شعبہ کو نظر انداز کرنے دوسری جماعتوں کے ارکان اسمبلی ارکان پارلیمنٹ ارکان قانون ساز کونسل کی سیاسی وفاداریاں تبدیل کرانے وزارت میں خواتین کو نظر انداز کرنے ۔ ملک میں تمام چیف منسٹرس میں سب سے زیادہ تنخواہ حاصل کرنے والے چیف منسٹر 500 کروڑ روپئے کے پرگتی بھون میں رہنے والے چیف منسٹرس میں تلنگانہ اور کے سی آر سرفہرست ہیں ۔ ملک کے تمام چیف منسٹرس میں 50 سے زائد ہائی کورٹ کی جانب سے پھٹکار کھانے والے چیف منسٹرس میں کے سی آر سرفہرست ہے ۔ کسانوں کو اقل ترین قیمت دستیاب نہیں ہورہی ہے ۔ نوجوان روزگار سے محروم ہیں ۔ ریاست میں 3 لاکھ جائیدادیں مخلوعہ ہیں جن میں 10 فیصد جائیدادوں پر بھی تقررات نہیں کئے گئے ۔ تقسیم آندھرا پردیش بل میں تلنگانہ سے جو بھی وعدے کئے گئے وہ پورے نہیں ہوئے ۔ سماج کے تمام طبقات ایس سی ، ایس ٹی ، بی سی اور اقلیتوں کو حکومت نے مایوس کیا ہے ۔ بیروزگار نوجوان اور خواتین سب کے سب حکومت کی کارکردگی سے بیزار ہیں ۔ تلنگانہ کی تحریک میں اہم رول ادا کرنے والوں کو نہ صرف نظر انداز کیا گیا ہے بلکہ ان کے ساتھ سیاسی انتقام لیا جارہا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT