Thursday , September 20 2018
Home / کھیل کی خبریں / سن رائزرس حیدرآباد کیخلاف آج راجستھان کو سبقت

سن رائزرس حیدرآباد کیخلاف آج راجستھان کو سبقت

احمدآباد۔ 7 مئی (سیاست ڈاٹ کام) سن رائزرس حیدرآباد کا آئی پی ایل میں کل مقابلہ بہتر مظاہرہ کررہی راجستھان رائلس کے خلاف ہوگا اور اسے کامیابی کے لئے سخت امتحاں متوقع ہے۔ گزشتہ مقابلے میں راجستھان رائلس نے ڈرامائی لمحات کے بعد کولکتہ نائیٹ رائیڈرس کو 10 رنز سے شکست دی ہے جبکہ سن رائزرس حیدرآباد کو اپنے گزشتہ مقابلے میں رائل چیلنجرس بن

احمدآباد۔ 7 مئی (سیاست ڈاٹ کام) سن رائزرس حیدرآباد کا آئی پی ایل میں کل مقابلہ بہتر مظاہرہ کررہی راجستھان رائلس کے خلاف ہوگا اور اسے کامیابی کے لئے سخت امتحاں متوقع ہے۔ گزشتہ مقابلے میں راجستھان رائلس نے ڈرامائی لمحات کے بعد کولکتہ نائیٹ رائیڈرس کو 10 رنز سے شکست دی ہے جبکہ سن رائزرس حیدرآباد کو اپنے گزشتہ مقابلے میں رائل چیلنجرس بنگلور کے خلاف شکست برداشت کرنی پڑی ہے۔ راجستھان رائلس کی آسٹریلیا کے آل راؤنڈر شین واٹسن کامیاب قیادت کررہے ہیں جس نے متحدہ عرب امارات میں دو فتوحات کے ذریعہ مجموعی طور پر ٹیموں کے جدول میں تیسرے مقام پر فائز ہے جبکہ جنوبی ہندوستان کے شہر سے تعلق رکھنے والی سن رائزرس حیدرآبادکی ٹیم کو ٹورنمنٹ میں جدوجہد کرنا پڑ رہا ہے اور وہ 8 ٹیموں کے ٹورنمنٹ میں ساتویں مقام پر موجود ہے۔

واٹسن نہ صرف ٹیم کی کامیاب قیادت کررہے ہیں بلکہ ٹیم کی صف بندی میں وہ ایک اہم کھلاڑی کی حیثیت رکھنے کے علاوہ بیٹنگ اور بولنگ دونوں ہی میں ٹیم کیلئے بہتر مظاہرہ کررہے ہیں۔ گزشتہ مقابلے میں انہوں نے 20 گیندوں میں 31 رنز اسکور کرنے کے علاوہ بولنگ میں 21 رنز دے کر 3 وکٹیں بھی حاصل کی ہیں۔ علاوہ ازیں نوجوان کرون نیر نے بھی ٹاپ آرڈر میں بہتر مظاہرہ کرتے ہوئے ٹیم کی فتوحات میں کلیدی رول ادا کیا ہے جبکہ اجنکیا راہنے نے اپنے مظاہروں میں استقلال کا ثبوت دیا ہے۔ حیدرآباد کے بولرس کے لئے یہ کھلاڑی ہی پریشانی کا باعث نہیں بلکہ نوجوان سنجو سامسن اور اسٹیون اسمتھ بھی ٹیم کے مظاہروں میں تیز رفتار رنز کے ذریعہ اپنا کردار ادا کرسکتے ہیں۔

راجستھان رائلس کے لئے 42 سالہ لیگ اسپنر پراوین تمبے کے مظاہرے توجہ کا مرکز ہیں جیسا کہ انہوں نے گزشتہ مقابلے میں کے کے آر کے خلاف غیرمعمولی مظاہرہ کیا ہے۔ بولنگ شعبہ میں ٹم ساؤتھی اور جیمس فالکنر کے علاوہ دوسرا کوئی مخصوص بولر نہیں لہذا واٹسن ان سے بہتر مظاہرہ کی اُمید کررہے ہیں۔ راجستھان کے بولروں نے خصوصاً کے کے آر کے خلاف غیرمعمولی مظاہرہ کیا ہے کیونکہ ایک موقع پر 171 رنز کے تعاقب میں کے کے آر 121/1 کے ذریعہ بہتر موقف میں تھی لیکن دو رنز کے اضافہ پر ہی ان بولروں نے 5 وکٹیں حاصل کرتے ہوئے اپنی ٹیم کو ایک غیرمعمولی کامیابی دلوائی۔ جہاں تک سن رائزرس حیدرآباد کا تعلق ہے اس کے لئے کپتان شکھر دھون کا ٹیم کو مثالی مظاہرہ پیش کرنا ہنوز باقی ہے

کیونکہ کپتان کے ناقص مظاہروں کا ٹیم کی فتوحات پر بھی اثر پڑ رہا ہے۔ حیدرآبادی کپتان خود ان کے ناقص فام سے پریشان ہوں گے کیونکہ وہ اچھی طرح جانتے ہیں کہ ان کے مظاہرے ٹیم کیلئے کتنے اہم ہیں حالانکہ انہیں آسٹریلیا کے خطرناک تصور کئے جانے والے بیٹسمین آرون فنچ کا ساتھ دستیاب ہے۔ حیدرآباد کے لئے شاندار فام میں موجود ڈیوڈ وارنر کے مظاہرے ناکافی ہورہے ہیں کیونکہ مڈل آرڈر میں ویسٹ انڈیز کے کپتان ڈیرن سیمی کے بیاٹ سے رنز نہیں بن رہے ہیں جس کی وجہ سے وارنر پر ہی ٹیم کے اسکور میں بڑا تعاون دینے کی ذمہ داری عائد ہورہی ہے۔ فاسٹ بولنگ شعبہ میں بھی ڈیر اسٹین کی قیادت کے علاوہ بھونیشور کمار اور ایشانت شرما بھی موجود ہیں جبکہ درمیانی اوورس میں عرفان پٹھان اور سیمی کے علاوہ اسپن شعبہ میں کرن شرما موجود ہیں۔

TOPPOPULARRECENT