Friday , June 22 2018
Home / دنیا / سوئزرلینڈ میں ایچ ایس بی دفاتر پر دھاوے

سوئزرلینڈ میں ایچ ایس بی دفاتر پر دھاوے

جنیوا 18 فروری (سیاست ڈاٹ کام) سوئزرلینڈ کی پولیس نے آج ایچ ایس بی سی کے کئی دفاتر پر دھاوے کئے جو اس سرکردہ عالمی بینکنگ ادارہ کی جانب سے مشتبہ ہیر پھیر کی تحقیقات کا ایک حصہ ہیں۔ یہ بینک اس وقت شہ سرخیوں میں آگئی جب اس کے کھاتہ داروں کی فہرست کا افشاء ہوگیا۔ اس فہرست میں 1,195 ہندوستانی کھاتہ داروں کے نام بھی پائے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ

جنیوا 18 فروری (سیاست ڈاٹ کام) سوئزرلینڈ کی پولیس نے آج ایچ ایس بی سی کے کئی دفاتر پر دھاوے کئے جو اس سرکردہ عالمی بینکنگ ادارہ کی جانب سے مشتبہ ہیر پھیر کی تحقیقات کا ایک حصہ ہیں۔ یہ بینک اس وقت شہ سرخیوں میں آگئی جب اس کے کھاتہ داروں کی فہرست کا افشاء ہوگیا۔ اس فہرست میں 1,195 ہندوستانی کھاتہ داروں کے نام بھی پائے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ تحقیق پر مبنی رپورٹنگ کرنے والے جرنلسٹوں کے ایک گروپ نے ایچ ایس بی سی کے تقریباً ایک لاکھ کھاتہ داروں کی تفصیلات کا انکشاف کیا تھا جس کے بعد رواں ماہ کے اوائل سے یہ بینک شک کے دائرہ میں آگیا تھا۔ 1,195 ہندوستانی کھاتہ داروں کی فہرست میں کئی بڑے کارپوریٹس اور مشہور و معروف سیاسی قائدین کے نام بھی شامل ہیں۔ سوئیس استغاثہ فی الحال ایچ ایس بی سی پرائیوٹ بینک کے علاوہ چند نامعلوم افراد سے مشتبہ رقمی ہیر پھیر کی سرگرمیوں کے بارے میں پوچھ گچھ کررہے ہیں۔

سوئیس اساتفا کے دفتر نے اپنے ایک بیان میں کہاکہ ’’ایچ ایس بی سی پرائیوٹ بینک (سوئزرلینڈ) کے بارے میں حالیہ انکشافات کے بعد سرکاری استغاثہ نے اس بینک کے خلاف فوجداری کارروائی شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو بڑے پیمانے پر رقمی ہیر پھیر سے متعلق ہیں‘‘۔ یہ تحقیقات ان الزامات کے پس منظر میں شروع کی گئی ہیں کہ اس بینک نے اپنے دولتمند کھاتہ داروں کو ٹیکس ادا کرنے سے گریز میں مدد کی ہے۔ استغاثہ کے مطابق تحقیقات میں پیشرفت کی صورت میں دوسروں سے پوچھ گچھ کی عمل کو وسعت دی جائے گی۔ حالیہ انکشافات میں یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ دنیا بھر کے 200 سے زائد ملکوں میں واقع ایچ ایس بی سی بینکوں نے اپنے کھاتہ داروں کو 119 ارب امریکی ڈالر ٹیکس کی ادائیگی سے بچنے میں مدد کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT