Tuesday , December 12 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سوائن فلو سے بچنے کیلئے احتیاطی تدابیر ضروری

سوائن فلو سے بچنے کیلئے احتیاطی تدابیر ضروری

لنگم پیٹ، مدنور، پٹلم، ناگی ریڈی پیٹ میں چند افراد متاثر
یلاریڈی۔/20اکٹوبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سوائن فلو کا نام سنتے ہی عوام چونک پڑ رہے ہیں۔ لیکن اس سے بچنے کیلئے ضروری احتیاطی تدابیر سے دور رہتے ہیں۔ اب تک شہر حیدرآباد میں سوائن فلو نے کئی افراد کو متاثر کیا اور ان میں کچھ لوگ فوت بھی ہوچکے۔ اب یہ مرض شہر سے نکل کر مواضعات تک پھیل رہا ہے۔ مختلف مقامات پر سوائن فلو کے کیسیس درج ہوئے اس سال دو افراد فوت ہوگئے۔ ایک تو میناریٹی اقامتی اسکول پرنسپال مسٹر محمد عبدالوحید 59 سالہ ان دنوں ہی سوائن فلو ہونے سے فوت ہوئے ۔ضلع میں اب تک 17 افراد کو اس مرض نے غیر معمولی متاثر کیا ہے جس کو دور کرنے میں تمام کو کافی طبی امداد کا سہارا لینا پڑا۔ شدید ترین سرد موسم میں H1N1 نامی وائرس شدید زوروں سے پھیلتا ہے، لاپرواہی کرنے پر خطرناک بھی ثابت ہوسکتا ہے۔ یہ متعدی وائرس ہونے سے ایک دوسرے سے پھیل سکتا ہے۔ اس لئے آنے والے موسم سرما میں ہر فرد کو احتیاطی تدابیر سے کام لینا ہوگا۔ ورنہ گراں صحت کو خطرہ رہے گا۔ یلاریڈی حلقہ کے تاڑوائی، لنگم پیٹ، منڈل اور مدنور ۔ پٹلم۔ یدا ملاریڈی علاقوں میں ایک، ایک فرد سوائن فلو سے متاثر ہوا ہے۔ اطلاعات کے مطابق یلاریڈی، ناگی ریڈی پیٹ ، گندھاری علاقوں میں بھی سوائن فلو نے چند افراد کو متاثر کیا ہے۔ ضلع DMHOنے بھی سوائن فلو کے پھیلنے کی تصدیق کی ہے۔ مختلف مقامات پر وائرل انفیکشن سرد موسم میں زیادہ تر اثر کرتا ہے اور ایک دوسرے سے پھیلنے کا خطرہ لگا رہتا ہے۔ گھریلو برتن کو ہمیشہ صاف ستھرا رکھنے اور بخار وغیرہ ہونے پر فوری ڈاکٹر سے رجوع ہونے کا مشورہ دیا۔ ابتدائی مرحلہ میں علاج بہتر رہے گا۔ لاپرواہی کرنے پر ہی خطرہ ہوگا۔ سوائن فلو کے معاملہ میں نمونیا تک جانے سے قبل شناخت کرلینا ٹھیک رہے گا۔ سوائن فلو H1N1 کی وجہ انفلوائنزا، اے وائرس موسم میں تبدیلی، خنزیر، مچھر کے ذریعہ یہ وائرس آنے کا خطرہ رہتا ہے۔ ڈاکٹروں کے کہنے کے مطابق شدید بخار، کھانسی، سردرد، اس مرض کی نشانیاں ہییں۔ یہ مرض ہوا کے ذریعہ کھانسنے پر چھینکنے سے، بات کرتے ہوئے ہاتھ ملانے سے ایک دوسرے کو پھیل سکتا ہے جو پھیپھڑوں کے ذریعہ جسم میں پھیل کر خطرناک ثابت ہوتا ہے۔ ان نشانیوں والے افراد اگر لاپرواہی کریں گے تو زندگی کو خطرہ لاحق رہے گا۔ فوری ڈاکٹروں سے ربط کرنے کا خود ڈاکٹرس مشورہ دے رہے ہیں۔ سوائن فلو سے بچنے کیلئے احتیاطی تدابیر میں صاف صفائی کا خاص خیال رکھیں اور مچھروں کی افزائش ہونے نہ دیں۔ ہمیشہ اپنے دونوں ہاتھوں کو صاف ستھرا رکھیں۔ چھینکنے، کھانسنے پر رومال کا استعمال ضرور کریں۔ روزانہ کم از آٹھ گھنٹہ نیند کو یقینی بنائیں۔ زیادہ پانی پئیں، صحتمند غذا کا استعمال کریں۔ کھانسی و بخار والوں کے قریب جانے سے پرہیز کریں۔ ان احتیاط سے سوائن فلو کو روکا جاسکتا ہے۔ اس سے محفوظ رہا جاسکتا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ اس مرض سے بچنے کیلئے ان باتوں کا بھی خاص خیال رکھنا ضروری ہے۔ کسی سے ملاقات پر ہاتھ نہ ملائیں، عوام کے ہجوم والی جگہ نہ جائیں تو بتر ہوگا۔ ڈاکٹر کے مشورہ کے بناء دوائیںاستعال نہ کریں۔ عام جگہوں پر تھوکنے سے بھی پرہیزکریں۔ اس طرح کی احتیاط سے ہی سوائن فلو جیسے متعدد امراض سے محفوظ رہا جاسکتا ہے۔

 

TOPPOPULARRECENT