Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / سوشیل میڈیا پر حج کمیٹی کے موسوم ہینڈ بیاگ سے سنسنی

سوشیل میڈیا پر حج کمیٹی کے موسوم ہینڈ بیاگ سے سنسنی

شرپسند عناصر کی کارستانی کا پتہ چلالیا گیا ، انٹلی جنس عہدیداروں کی بروقت کارروائی
حیدرآباد۔/16اگسٹ، ( سیاست نیوز) حج کمیٹی کے نام سے واٹس اَپ پر جاری کئے گئے ایک مشتبہ بیاگ نے نہ صرف عہدیداروں بلکہ عازمین حج میں سنسنی دوڑا دی تھی تاہم انٹلیجنس عہدیداروں نے بیاگ کی اصلیت کا پتہ چلا لیا ہے۔ انٹلیجنس کی تحقیقات میں یہ ثابت ہوگیا کہ کسی نے شرانگیزی کے مقصد سے اس ہینڈ بیاگ کو تیار کیا اور اس پر حج کمیٹی کا نام تحریر کرتے ہوئے ساتھ میں خنزیر کی تصویر بھی پرنٹ کردی۔ واٹس اَپ پر اسے عام کرتے ہوئے یہ پیام دیا گیا کہ حج کمیٹی کی جانب سے یہ ہینڈ کیاری بیگ عازمین حج میں تقسیم کیا جارہا ہے جو کہ توہین کے مترادف ہے۔ سوشیل میڈیا پر اس تصویر کے عام ہوتے ہی عازمین حج میں تشویش کی لہر دوڑ گئی اور حج کمیٹی کے حکام سے کئی عازمین رجوع ہوئے۔ اس سلسلہ میں انٹلیجنس نے چوکسی اختیار کرتے ہوئے حقائق کا پتہ چلایا جس میں انکشاف ہوا کہ یہ بیاگ شمالی ہند کے کسی علاقہ میں شر انگیزی کے طور پر تیار کیا گیا اور سدی پیٹ میں کسی نے اسے سوشیل میڈیا پر عام کیا۔ بیاگ پر صرف حج کمیٹی تحریر کیا ہوا ہے اور ساتھ میں بد جانور کی تصویر ہے۔ واضح رہے کہ سنٹرل حج کمیٹی یا ریاستی حج کمیٹی کی جانب سے کبھی بھی عازمین میں ہینڈ کیاری بیگ کی تقسیم عمل میں نہیں آئی۔ اس کے علاوہ سنٹرل حج کمیٹی نے صرف گذشتہ سال ہی عازمین کو سوٹ کیس فراہم کئے تھے تاہم جاریہ سال اس تجویز سے دستبرداری اختیار کرلی گئی۔ ایسے میں حج کمیٹی کے نام سے سوشیل میڈیا پر بیاگ کی تصویر سوائے شرانگیزی کے کچھ نہیں تھی۔ تلنگانہ حج کمیٹی کے اسپیشل آفیسر ایس اے شکور نے عازمین حج اور مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ اس پروپگنڈہ کا شکار نہ ہوں۔

TOPPOPULARRECENT