Wednesday , June 20 2018
Home / Top Stories / سوشیل میڈیا پر غیر مصدقہ مواد وائرل کرنے والوں کے خلاف کارروائی

سوشیل میڈیا پر غیر مصدقہ مواد وائرل کرنے والوں کے خلاف کارروائی

بچوں کے اغوا کی ٹولیوں کی عدم موجودگی ، ڈی جی پی ایم مہیندر ریڈی
حیدرآباد۔23 مئی (سیاست نیوز) ریاست میں سوشیل میڈیا میں وائرل میسیجس کے نتیجہ میں پیش آئی دو ہلاکتوں کا سخت نوٹ لیتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس ایم مہیندر ریڈی نے آج کہا کہ غیرمصدقہ مواد کو وائرل کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بچوں کو اغوا کرنے والی بین ریاستی ٹولی کا کوئی وجود ہی نہیں ہے۔ ریاستی پولیس سربراہ نے بی بی نگر اور نظام آباد کے بیمگل ولیج میں اغوا کنندگان کی ٹولی کے ارکان ہونے کے شبہ میں عوام کی جانب سے شدید زدوکوب کئے جانے کے بعد پیش آئی ہلاکتوں کی توثیق کرتے ہوئے کہا کہ سوشیل میڈیا پر جاری وائرل میسیجس بے بنیاد اور غلط ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریاست بھر میں پولیس چوکس ہے اور انہیں مجرمین کی ایسی کوئی ٹولی جو بچوں کو اغوا کرکے انہیں قتل کرنے یا سرقہ کی سنگین واردات کے دوران قتل کرنے میں ملوث ہو، کا کوئی وجود نہیں ہے۔ مہیندر ریڈی نے عوام سے اپیل کی ہے کہ کسی بھی مشتبہ فرد پر شبہ ہونے پر وہ فوری پولیس کنٹرول روم 100 نمبر پر اطلاع دیں یا مقامی پولیس اسٹیشن کو بھی مطلع کرسکتے ہیں۔ ڈائریکٹر جنرل آف پولیس مہیندر ریڈی نے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولیس سی آئی ڈی گووند سنگھ اور ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولیس (لا اینڈ آرڈر) جیتندر کے ساتھ اس پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ وائرل میسیجس کو فارورڈ کرنے اور اسے سوشیل میڈیا پر گشت کروانے والے افراد کی نشاندہی کی جارہی ہے اور ان کے خلاف آئی ٹی ایکٹ اور دیگر دفعات کے تحت سخت کارروائی کی جارہی ہے۔ مہیندر ریڈی نے کہا کہ ریاست کے تمام سوشیل میڈیا گروپس پر انٹلیجنس اور سی آئی ڈی کی کڑی نظر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں افواہوں کا بازار گرم ہونے کے پیش نظر اضلاع کے تمام سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کو چوکس رہنے اور کسی بھی اطلاع پر فوری کارروائی کرنے کی ہدایت دی ہے۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ وائرل میسیجس پر توجہ نہ دیں جبکہ پولیس ان کی سکیورٹی کیلئے ہر وقت موجود ہے۔

TOPPOPULARRECENT