Friday , January 19 2018
Home / شہر کی خبریں / سونیا گاندھی اور راہول گاندھی کا دورہ تلنگانہ

سونیا گاندھی اور راہول گاندھی کا دورہ تلنگانہ

انتخابی مہم کے تحت جلسوں اور روڈ شوز کا پروگرام ، وسیع پیمانے پر اقدامات

انتخابی مہم کے تحت جلسوں اور روڈ شوز کا پروگرام ، وسیع پیمانے پر اقدامات
حیدرآباد ۔ 3 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی 13 اور صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی 16 اپریل کو علاقہ تلنگانہ کے مختلف مقامات پر انتخابی مہم جلسوں اور روڈ شوز میں حصہ لیں گے ۔ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کی جانب سے جلسوں کو کامیاب بنانے کے لیے بڑے پیمانے پر اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کی جانب سے ایک طرف سی پی آئی سے سیاسی اتحاد اور دوسری طرف امیدواروں کے انتخاب اور انتخابی مہم چلانے پر ساری توجہ مرکوز کردی ہے ۔ تشہیری کمیٹی کے صدر نشین دامودھر راج نرسمہا اور معاون صدر مسٹر محمد علی شبیر انتخابی مہم کے لیے حکمت عملی تیار کرنے میں مصروف ہیں ۔ سونیا گاندھی اور راہول گاندھی کے علاوہ سینئیر قائدین کو تلنگانہ کی انتخابی مہم میں شامل کرنے کے لیے منصوبہ بندی تیار کرلی ہے ۔ تلنگانہ کے تمام اضلاع میں سونیا گاندھی اور راہول گاندھی کی خدمات سے استفادہ کرنے کی ہر ممکن کوشش کررہے ہیں ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ 16 اپریل کو سکندرآباد پریڈ گراونڈ پر سونیا گاندھی کا جلسہ عام منعقد کیا جارہا ہے ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر پنالہ لکشمیا نے کہا کہ سی پی آئی سے سیاسی اتحاد کے لیے مذاکرات جاری ہیں آج شام تک قطعیت پانے کی امید ہے ۔ مجلس سے اتحاد کا جہاں تک معاملہ ہے ماضی میں جس طرح مجلس سے دوستانہ تعلقات تھے وہی تعلقات 2014 کے عام انتخابات میں بھی رہیں گے ۔ انہوں نے پھر ایکبار صدر ٹی آر ایس مسٹر کے چندر شیکھر راؤ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ بھروسے کے قابل نہیں ہے ۔ اگر ٹی آر ایس اتحاد کا پیشکش کرتی ہے تو اس پر کانگریس ضرور غور کرے گی ۔ کانگریس کے سینئیر قائد مسٹر کے جانا ریڈی نے تلنگانہ کے عوام سے اپیل کی کہ وہ وعدے کو نبھانے والی کانگریس پارٹی کو علحدہ تلنگانہ ریاست میں اقتدار حوالے کریں صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی نے تلنگانہ عوام سے کئے گئے وعدے کو نبھانے کے لیے سیما آندھرا میں کانگریس پارٹی کے نقصان کو برداشت کیا ۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ تلنگانہ میں پہلی حکومت کانگریس پارٹی کی ہی بنے گی ۔ تمام موجودہ ارکان اسمبلی کو دوبارہ ٹکٹ دینے کی ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے ۔ جہاں تک میرے فرزند کو ٹکٹ دینے کا معاملہ ہے اس کا فیصلہ کانگریس ہائی کمان کرے گی ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT