Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / سونے کے شرٹ والے بزنسمین کا بہیمانہ قتل

سونے کے شرٹ والے بزنسمین کا بہیمانہ قتل

پولیس نے 5 افراد بشمول بھتیجہ کو گرفتارکرلیا
پونے ۔ 15 ۔ جولائی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : پونے کے متوطن ایک 44 سالہ شخص کو جس نے 4 سال قبل 1.27 کروڑ روپئے مالیتی سونے کا  شرٹ پہن کر شہرت حاصل کی تھی آج صبح سویرے اس کے لڑکے کے سامنے پتھروں سے مار کر ہلاک کردیا گیا ۔ پولیس نے دتاتریہ پھوگے قتل کے سلسلہ میں 5 افراد بشمول بھتیجہ کو گرفتار کرلیا اور بتایا کہ اس قتل کے پس پردہ مالیاتی تنازعہ محرک ہوسکتا ہے ۔ بزنس مین پھوگے کے خلاف متعدد کریمنل کیس درج ہیں اور چٹ فنڈ کے ذریعہ لوگوں سے رقومات وصول کرتا تھا ۔ پولیس نے بتایا کہ سابق میں پھوگے کے خلاف مالیاتی بے قاعدگیوں کی شکایات موصول ہوئی تھیں ۔ ممکن ہے کہ قتل کی وجہ یہ ہوسکتی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ایک کھلے میدان میں پھوگے پر حملہ کیا گیا جب کہ پھوگے اور ان کے فرزند کو ایک مشتبہ شخص نے سالگرہ تقریب میں مدعو کیا تھا تاہم پولیس یہ تحقیقات کررہی ہے کہ پھوگے کس طرح یہ میدان پہنچا جہاں پر اسے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا ۔ ڈگی پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر نوناتھ گھوگرے نے بتایا کہ پھوگے کے 22 سالہ لڑکے کو بھی اس تقریب سالگرہ میں مدعو کیا گیا تھا ۔ جہاں ان کی آنکھوں کے سامنے والد کا قتل کردیا گیا ۔ واضح رہے کہ 44 سالہ پھوگے نے اسمبلی انتخابات میں قسمت آزمائی تھی اور چٹ فنڈ میں سرمایہ کاری کرنے والوں کے ساتھ تنازعہ پیدا ہوگیا تھا ۔ تاہم پولیس نے بتایا کہ پھوگے کی اہلیہ سیما نے یہ اطلاع دی ہے کہ بعض افراد جمعرات کی شب بھوسری میں واقع ان کے مکان آئے تھے ۔ اور ان کے شوہر کو ساتھ لے کر ڈگی میں بھارت ماتا نگر چلے گئے جہاں ان پر پتھروں اور چاقوؤں سے حملہ کردیا گیا ۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کی سابق کارپوریٹر سیما کو جعلی سرٹیفیکٹ داخل کرنے پر عہدہ سے برطرف کردیا گیا ہے ۔ این سی پی لیڈر دتاتریہ پھوگے کو اس وقت میڈیا میں شہرت حاصل ہوئی جب انہوں نے 3.5 کلو گرام وزنی سونے سے تیار کردہ ایک خصوصی شرٹ پہن کر مظاہرہ کیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT