سپریم کورٹ میں تلگو دیشم ایم ایل سی نرسا ریڈی کی کامیابی

نظام آباد۔4۔ فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)تلگودیشم ایم ایل سی مسٹر ارکلہ نرساریڈی کو آج سپریم کورٹ میں کامیابی حاصل ہوئی۔ ایم ایل سی مسٹر ارکلہ نرساریڈی کے خلاف کانگریسی امیدوار وینکٹ رام ریڈی کی جانب سے سپریم کورٹ میں دائر کردہ مقدمہ میں کامیابی حاصل ہونے پر ارکلہ نرساریڈی نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھگوان نے انہیں انتخابات

نظام آباد۔4۔ فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)تلگودیشم ایم ایل سی مسٹر ارکلہ نرساریڈی کو آج سپریم کورٹ میں کامیابی حاصل ہوئی۔ ایم ایل سی مسٹر ارکلہ نرساریڈی کے خلاف کانگریسی امیدوار وینکٹ رام ریڈی کی جانب سے سپریم کورٹ میں دائر کردہ مقدمہ میں کامیابی حاصل ہونے پر ارکلہ نرساریڈی نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھگوان نے انہیں انتخابات میں کامیابی دی تھی لیکن ان کے حریف اس کامیابی کو لیکر عدالت سے رجوع ہوا تھا اور عدالت سے انہیں انصاف حاصل ہوا ہے ۔تفصیلات کے بموجب قانون ساز کونسل کے مقامی ادارہ جات کیلئے 20 مارچ 2009 ء کو نظام آباد میں منعقدہ انتخابات میں تلگودیشم امیدوار ارکلہ نرساریڈی کو 336 اور کانگریس امیدوار وینکٹ رام ریڈی کو 335 ووٹ حاصل ہونے پر نرساریڈی کو ایک ووٹ سے کامیاب قرار دیا گیا تھاجس پر کانگریس امیدوار وینکٹ رام ریڈی نے ہائی کورٹ سے رجوع ہوتے ہوئے دوبارہ رائے شماری کرنے کی خواہش کی تھی ہائی کورٹ نے رائے شماری کرتے ہوئے کانگریس امیدوار مسٹر وینکٹ رام ریڈی کو دو ووٹوں سے منتخب قرار دیا تھا

اور مسترد کردہ 3 ووٹوں کو وینکٹ رام ریڈی کے حق میں دیا تھااور وینکٹ رام ریڈی کو منتخب قرار دیتے ہوئے فیصلہ دیا تھا جس پر نرساریڈی نے سپریم کورٹ سے رجوع ہوتے ہوئے دوبارہ رائے شماری کرنے کی خواہش کی تھی اور وینکٹ رام ریڈی کو فیصلہ تک حلف نہ دلانے کا حکم التواء بھی حاصل کیا تھا اور یہ معاملہ سپریم کورٹ کے IVنمبر بنچ پر چل رہا تھا سپریم کورٹ کے IVبنچ کے ججس بی اے چوہان، محمد اقبال، این مہیشورنے دونوں فریقین کے وکلاء کے بحث کے بعد اور ووٹوں کی جانچ پڑتال کے بعد وینکٹ رام ریڈی کے حق میں شامل کردہ 3ووٹوں میں سے 2ووٹوں کو مسترد کرنے پر وینکٹ رام ریڈی اور نرساریڈی کے ووٹ 336 اور 336مساوی ہونے پر ٹاس کیا گیا اور ٹاس میں ارکلہ نرساریڈی نے جیت حاصل ہوئی جس پر ارکلہ نرساریڈی نے مسرت کا اظہار کیاآج دہلی سے ارکلہ نرساریڈی کو نمائندہ سیاست محمد جاوید علی سے فون پر بات کرتے ہوئے اپنی کامیابی اور سپریم کورٹ کے فیصلہ سے واقف کرواتے ہوئے مسرت کا اظہار کیا۔ گذشتہ 5سال سے ارکلہ نرساریڈی اور وینکٹ رام ریڈی کا معاملہ ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں زیر غور تھا۔ سپریم کورٹ کے فیصلہ سے یہ معاملہ حل ہوا۔ ارکلہ نرساریڈی سپریم کورٹ میں کامیابی پر تلگودیشم اقلیتی سیل صدر نوید اقبال اور دیگر قائدین نے نرساریڈی کو مبارکباد پیش کی ۔

TOPPOPULARRECENT