Sunday , August 19 2018
Home / ہندوستان / سپریم کورٹ میں نکاحِ حلالہ کیخلاف درخواست

سپریم کورٹ میں نکاحِ حلالہ کیخلاف درخواست

نئی دہلی ۔ 5 مارچ ۔(سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ کی جانب سے طلاقِ ثلاثہ کو غیرقانونی دینے کے بعد سپریم کورٹ میں آج ایک درخواست پیش کی گئی ہے جس کے تحت گذارش کی گئی ہے کہ کثیر زوجگی اور نکاحِ حلالہ کے روا ج کو جو مسلمانوں میں پایا جاتا ہے ’’غیردستوری‘‘ اور ’’خواتین کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ‘‘ قرار دیا جائے ۔ نکاحِ حلالہ کا مقصد طلاق کے واقعات میں کمی کرنا ہے ۔ کوئی بھی مرد اپنی سابقہ بیوی سے طلاق کے بعد اُس وقت تک دوبارہ نکاح نہیں کرسکتا جب تک کہ وہ کسی اور سے نکاح نہ کرلے اور بعد ازاں اُسے طلاق دیدی جائے ۔ عدت کے بعد اُس کا سابق شوہر اُس سے دوبارہ نکاح کرسکتا ہے ۔ تازہ درخواست میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ کثیر زوجگی اور نکاحِ حلالہ مسلم خواتین کی بنیادی حقوق کے خلاف ہے جس کی طمانیت دستورِ ہند میں دی گئی ہے ۔ درخواست کی سماعت کے بعد پانچ ججس پر مشتمل دستوری بنچ نے تین اور دو کے تناسب میں اختلافی فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ اکثریت کی جانب سے طلاق ِ ثلالہ کو کالعدم قرار دینے پر ردعمل کے پیش نظر نکاحِ حلالہ کے بارے میں فی الحال فیصلہ نہیں سنایا جاسکتا ۔

TOPPOPULARRECENT