Monday , November 19 2018
Home / ہندوستان / سپریم کورٹ کے حکم نامہ کیخلاف تاجروں کا انوکھا احتجاج

سپریم کورٹ کے حکم نامہ کیخلاف تاجروں کا انوکھا احتجاج

پرانے پٹاخوں کیساتھ ترکاریاں فروخت دوارکا سے 240 کیلوگرام غیرقانونی پٹاخے ضبط

نئی دہلی۔ 7 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) صدر بازار دہلی کے تاجروں نے آج پرانے پٹاخے ترکاریوں میں رکھ کر سپریم کورٹ کے حکم نامہ کے خلاف جس نے جاریہ سال دیوالی میں سبز پٹاخوں کے استعمال کا حکم دیا ہے، انوکھا احتجاج کیا۔ صدر بازار ویلفیر اسوسی ایشن نے کریلے ، گوبھی کے پھول ، شملہ مرچ اور بھینڈیوں میں پرانے پٹاخے رکھ کر انہیں فروخت کیا۔ گزشتہ ماہ سپریم کورٹ نے کہا تھا کہ ملک کے عوام کو 8 بجے شب تا 10 بجے شب دیوالی اور دیگر تہواروں پر پٹاخے چھوڑنے چاہئیں۔ حکم نامہ جاری کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے پیداوار کنندوں کو صرف ’’سبز پٹاخے ‘‘ فروخت کرنے کی اجازت دی تھی جن سے کم روشنی ، آواز اور مضر کیمیکلس کا اخراج ہوتا ہو۔ سپریم کورٹ کا حکم نامہ قبل ازیں جاری کیا جاچکا ہے جس کی وجہ سے تاجروں کو لائسنس خریدنے کی مہلت ملی تھی تاکہ سبز پٹاخے فروخت کرسکیں۔ صدر نشکرم ویلفیر اسوسی ایشن ہرجیت سنگھ تھابڑا نے کہا کہ سبز پٹاخے بعدازاں کھائے بھی جاسکتے ہیں۔ وہ ترکاریوں میں ٹھونسے ہوئے پرانے پٹاخوں نمائش کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ اگر یہ پٹاخے پھٹ نہ پائیں تو انہیں کھانے کیلئے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ تاجروں کے ایک اور نمائندے نے جس نے احتجاج میں حصہ لیا، کہا کہ جاریہ سال ان کی فروخت بہت کم ہوئی ۔ وہ عہدیداروں کے اقدام پر مایوس ہیں۔ بیشتر تاجروں نے شکایت کی کہ سپریم کورٹ کا حکم نامہ لمحہ آخر میں جاری کیا گیا اور لائسنس کے حصول کیلئے کوئی مہلت نہیں دی گئی۔ دریںاثناء لائسنس کے بغیر پٹاخوں کا ذخیرہ کرنے پر 3 افراد کو لائسنس نہ ہونے کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا اور 240 کیلوگرام وزنی پٹاخے دوارکا کے مختلف علاقوں سے ضبط کئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT