Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / سپریم کورٹ کے روبرو ہندو تنظیم کی آتشبازی

سپریم کورٹ کے روبرو ہندو تنظیم کی آتشبازی

پٹاخوں پر عدالت عظمی کے امتناع کی خلاف ورزی
نئی دہلی۔ 17 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک ہندوتوا تنظیم نے پٹاخے پھوڑنے پر سپریم کورٹ کے امتناع کی کھلے عام خلاف ورزی کرتے ہوئے عدالت عظمیٰ کے احاطہ کے باہر آج دیدہ دلیری کے ساتھ آتش بازی کی۔ بعدازاں اس ہندو تنظیم نے یہ کہتے ہوئے خود کو بچانے کی کوشش کی کہ سپریم کورٹ نے پٹاخے پھوڑنے پر نہیں بلکہ ان کی فروخت پر پابندی عائد کی ہے، تاہم انہوں نے دہلی میں آلودگی کی بدترین صورتحال کے پیش نظر امتناع عائد کرنے سے متعلق عدالت کے ارادہ کو نظرانداز کردیا۔ اس سے قبل دہلی بی جے پی یونٹ کے ترجمان تیجندر جگا نے مغربی دہلی کے ہری سنگھ علاقہ کے بچوں میں پٹاخے تقسیم کئے تھے۔ تیجندر سنگھ جگا نے مسلم علاقہ کے بچوں میں پٹاخے تقسیم کرتے ہوئے اپنی تصاویر اور ویڈیوز کو ٹوئٹر پر پوسٹ کیا اور یہ دعویٰ کیا کہ پٹاخے تقسیم کرنا عدالت کی توہین کے مترادف نہیں ہے۔ دہلی پولیس کے پی آر او مدھر ورما نے بھی کہا کہ جگا کے خلاف پولیس کوئی کارروائی نہیں کرے گی کیونکہ تحفہ کے طور پر پٹاخے تقسیم کرنا کوئی جرم نہیں ہے۔

 

Top Stories

TOPPOPULARRECENT