Thursday , April 26 2018
Home / Top Stories / سچ دکھانے پر فرقہ پرستوں کی دھمکیوں کا سامنا۔کاس گنج کی حقیقت دکھانے پر نیوز چینل کے صحافی کو دھمکی

سچ دکھانے پر فرقہ پرستوں کی دھمکیوں کا سامنا۔کاس گنج کی حقیقت دکھانے پر نیوز چینل کے صحافی کو دھمکی

نامعلوم شخص نے صحافی کو جان سے مارنے اور بیٹی کا اغوا کرنے کی دھمکی دی‘ متاثرہ صحافی نے ٹوئٹ کرکے یہ اطلا ع دی
لکھنو۔ یوم جمہوریہ کے موقع پر کاس گنج میں ہوئے فساد کے بعد اے بی پی نیوز چینل کے رپورٹر نے ترنگایاترا کی اجازت نہ ہونے کی بات بتائی تھی۔اس کے علاوہ نیوز چینل کا کہناتھا کہ ترنگا یاترا میں شامل نوجوان وہاں پر موجود دوسرے فرقہ کے لوگوں سے زبردستی نعرے لگانے کی بات کہہ رہے تھے۔

جس کونیوز چینل پر دکھانے پر نامعلوم افراد کے ذریعہ نیوز چینل کے صحافی پنکج جھا کو مسلسل دھمکیاں مل رہی ہیں۔ اس کی اطلاع آج انہوں نے ٹوئٹ پر دی جس میں انہوں نے لکھا ہے کہ اس سے قبل صحافتی زندگی میں کبھی اتنی گالیاں نہیں ملیں۔

اے بی پی نیوز چینل کے پنکج جھا نے بتایا کہ کا س گنج میں ہوئے فساد کے بارے میں ان کے چینل نے ترنگایاترا کی اجازت کے بارے میں معلوم کیا تو معلوم ہوا کہ کسی طرح کی اجازت نہیں لی گئی۔

اس کے علاوہ نیوز چینل کاس گنج معاملہ کی حقیقت عوام کے سامنے لایا۔ پنکج جھا نے ٹوئٹ کیا کہ اس کے بعد ان کے موبائل پر نامعلوم افراد کے فون آرہے ہیں جو ان کو گالیاں دیتے ہیں‘ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ نامعلوم افراد نے ان کی بیٹی کو بھی اغوا کرنے کی دھمکی دی۔

اس کے علاوہ نامعلوم شخص نے ان کو جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی ہے۔ ان کے اس ٹوئٹ کے بعد انہوں نے موبائل پر ائے نمبروں کو پولیس کو دے دئے ہیں۔اس سلسلہ میں اے ڈی جی قانون آنند کمار کا کہنا ہے کہ نمبروں کی جانچ کی جارہی ہے ۔ وہیں اس سلسلہ میں پنکج جھا سے بات کرنے کی کوشش کی گئی توان کا نمبر بند تھا۔

TOPPOPULARRECENT