Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / سڑکوں پر گڈھے و کھڈ، آمد و رفت میں مشکلات

سڑکوں پر گڈھے و کھڈ، آمد و رفت میں مشکلات

حادثات میں اضافہ، ریڑھ کی ہڈی، گردن و دیگر امراض سے عوام پریشان حال
حیدرآباد۔15اکٹوبر(سیاست نیوز) شہر حیدرآباد کی بارش اور اس کے سبب سڑکوں کو ہونے والے نقصانات شہریو ںکیلئے حادثات کے علاوہ دیگر ہڈیوں کی بیماریو ںکا سبب بن سکتے ہیں اور شہریو ںمیں ریڑھ کی ہڈی سے متعلق بیماریو ںمیں اضافہ کے علاوہ گردن اور پیٹھ کے درد جیسے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں۔ بارش کے سبب سڑکوں کی خرابی اور ناہموار سڑکوں پر گاڑیاں چلانے کے انسانی جسم پر مضر اثرات مرتب ہو سکتے ہیں اور یہ طویل مدت تک باقی رہنے والے بن جاتے ہیں اسی لئے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآبادکو فوری سڑکوں کی بہتری کیلئے اقدامات کرنے چاہئے ۔ ماہراطباء کا کہناہے کہ ناہموار سڑکوں پر موٹر سیکل چلانے کے سبب نہ صرف ہڈیوں میں تکلیف ہوتی ہے بلکہ یہ طویل مدتی تکالیف کا سلسلہ شروع ہو جاتاہے۔ شہر کی سڑکوں کی صورتحال کے متعلق مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے عہدیدارو ںکا کہنا ہے کہ شہر میں مسلسل بارش اور غیر متوقع موسمی صورتحال کے سبب فوری طور پر سڑکوں کی مرمت نہیں کی جا رہی ہے لیکن مصروف ترین سڑکوں پر پڑنے والے کھڈ بند کئے جانے کے اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ بلدی عہدیداروں نے بتایاکہ شہر کی جملہ 7لاکھ 89ہزار مربع میٹر سڑکیں متاثر ہیں اور ان سڑکوں کی تعمیر اور مرمت کے لئے بلدیہ نے 77کروڑ 77لاکھ کا تخمینہ لگا یا ہے اور تخمینہ اندازی کے بعد اس سلسلہ میں تفصیلی رپورٹ حکومت کو پیش کردی گئی ہے تاکہ موسم کے معمول پر آتے ہی سڑکوں کی تعمیر و مرمت کے کاموں کی انجام دہی کا آغازکردیا جائے۔ شہر حیدرآباد کے علاوہ شہر کے اطراف بلدی حدود کی سڑکوں کی حالت بھی انتہائی ابتر ہو چکی ہے لیکن کسی بھی علاقہ میں فوری طور پر سڑکوں کی مرمت و تعمیر کے سلسلہ میں کوئی ٹنڈر جاری کرنے سے گریز کیا جا رہا ہے ۔ محکمہ عمارات و شوارع کے عہدیداروں نے بھی شہر کی ان سڑکوں کی حالت کا جائزہ لیا جو انتہائی نا گفتہ بہ ہو چکی ہیں لیکن اس کے باوجود بھی صورتحال کو معمول پر لانے کے اقدامات کرنے سے گریز کیا جا رہا ہے کیونکہ شہر کا موسم غیر متوقع بنا ہوا ہے اور اس صورتحال میں موسمی تبدیلی کے اثرات کا جائزہ لینے کے بعد ہی مرمتی کام انجام دیئے جاسکتے ہیں۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے تیار کی گئی رپورٹ کے مطابق شہر حیدرآباد میں سب سے زیادہ سنٹرل زون میں سڑکیں متاثر ہیں جہاں 2لاکھ 58ہزار 180 مربع میٹر سڑکوں پر 510 گڑھے پائے گئے ہیں جن کی مرمت کیلئے 24کروڑ 41لاکھ روپئے درکار ہیں۔ اس کے بعد سب سے زیادہ ابتر حالت ویسٹ زون کی سڑکوں کی ہے جہاں 1لاکھ 33ہزار 63 مربع میٹر سڑکوں پر 410گڑھے ہو چکے ہیں جن کی مرمت کے لئے بلدیہ کو 16کروڑ 23لاکھ روپئے درکار ہیں۔ اسی طرح ساؤتھ زون کے علاقہ میں 2لاکھ 38ہزار 71مربع میٹر سڑکوں پر 364گڑھے پائے گئے ہیں جن کی مرمت کیلئے 20کروڑ 31لاکھ روپئے درکار ہیں۔ نارتھ زون میں 85ہزار 170 مربع میٹر سڑکوں پر 266 گڑھے پائے گئے ہیں جن کی مرمت کیلئے 10کروڑ 35لاکھ روپئے درکار ہیں اور ایسٹ زون میں 74ہزار 730 مربع میٹر سڑکوں پر بھی 266 گڑھوں کی نشاندہی کی گئی ہے جس کی مرمت کیلئے 6کروڑ 47لاکھ کا تخمینہ لگایا گیا ہے ۔عہدیداروں کے مطابق شہر کی سڑکوں کی تعمیر و مرمت کے کاموں کا آغاز آئندہ ماہ کے پہلے ہفتہ میں شروع کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT