Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / سڑکیں برباد ، کمشنر بلدیہ کی توجہ کیبل برج پر

سڑکیں برباد ، کمشنر بلدیہ کی توجہ کیبل برج پر

حیدرآباد۔28اگسٹ(سیاست نیوز) درگم چیروو پر کیبل برج کے تعمیراتی کاموں کی عہدیدارراست نگرانی کریں اور تعمیری معیار کا جائزہ لیتے رہیں تاکہ کوئی کوتاہی نہ ہونے پائے۔ تمام کاموں کو معینہ مدت میں تکمیل کرنے کیلئے ہنگامی خطوط پر کاموں کو انجام دیا جائے۔ ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی کمشنر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے آج درگم چیروو پر تعمیر کئے جا رہے کیبل برج کے تعمیراتی کا کاموں کا جائزہ لینے کے بعد یہ بات کہی اور کہا کہ جی ایچ ایم سی کی جانب سے 187.50کروڑ کی لاگت سے تعمیر کئے جارہے اس پراجکٹ کے بعد ٹریفک مسائل بھی دور ہوجائیں گے اور اس اہم ترین تاریخی تالاب پر کئے گئے قبضہ جات بھی برخواست کئے جا سکیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ جن کمپنیو ںکو یہ کام تفویض کیا گیا ان کمپنیوں کے ذمہ داروں کو اس بات کی تاکید کی گئی ہے کہ وہ معینہ مدت میں کام کی تکمیل کو یقینی بنائیں۔ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے کہا کہ ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق مسٹر کے ٹی راما راؤ نے ماہ اپریل میں اس پراجکٹ کا افتتاح انجام دیا تھا اور کہا تھا کہ اس پراجکٹ کو اندرون 18ماہ مکمل کرنے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے اور اس منصوبہ کو عملی جامہ پہنایا جائے گا۔ انہوں نے بتایاکہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے عہدیدارو ںکو اس پراجکٹ کے تعمیری و ترقیاتی کاموں کی نگرانی اور اندرون مدت تکمیل کو یقینی بنانے کی ذمہ داری تفویض کی گئی ہے ۔اسی لئے تعمیری کام تیزی کے ساتھ جاری ہیں اور توقع ہے کہ آئندہ چند ماہ کے دوران درگم چیروو کے اطراف کئے گئے ناجائزقبضہ جات کی برخواستگی کے بھی اقدامات کئے جائیں گے۔ ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے بتایا کہ قطب شاہی دور حکومت میں جب قلی قطب شاہ کا دور حکومت تھا 1518-1687درگم چیروو شہر کو پینے کے پانی کی سربراہی کا ذریعہ تھا اور اسی ذخیرہ آب سے شہریوں کو پینے کا پانی سربراہ کیا جاتا تھا اسی لئے اس تالاب کی تاریخی اہمیت بھی اپنی جگہ مسلمہ ہے۔انہوں نے بتایا کہ 1970میں ریاستی حکومت کے محکمہ عمارات وشوارع کی جانب سے اس تالاب کو ترقی دی گئی تھی اور یہ تالاب کا جملہ رقبہ 184ایکڑ پر محیط ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ریاستی حکومت اس تالاب کے اطراف موجود ناجائز قبضہ جات کی برخواستگی کے ساتھ اسے تفریحی و سیاحتی مرکز کے طور پر ترقی دینے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ کمشنر جی ایچ ایم سی نے بتایا کہ راہیجا کمپنی نے کارپوریٹ ذمہ داری کے مد میں 50لاکھ 80 ہزار روپئے اس پراجکٹ کیلئے دیئے ہیں اور جی ایچ ایم سی کے منصوبہ کے مطابق کیبل برج پر سائیکلنگ ٹریک اور بچوں کے کھیلنے کی جگہ بھی بنائی جائے گی ۔ تعمیراتی کاموں کے متعلق انہوں نے کہا کہ اب تک 5پلرس تعمیر کئے جا چکے ہیں اور تعمیراتی کام تیزی کے ساتھ جاری ہیں۔

TOPPOPULARRECENT