Wednesday , November 22 2017
Home / جرائم و حادثات / سڑک حادثات کا اصل سبب گاڑیوں کی تیز رفتاری

سڑک حادثات کا اصل سبب گاڑیوں کی تیز رفتاری

تیز رفتاری میں نوجوان ہی نہیں، درمیانی عمر کے لوگ بھی شامل

حیدرآباد ۔ 12 ستمبر (سیاست نیوز) یہ بات عام ہیکہ سڑک حادثات اکثر و بیشتر نوجوانوں کی وجہ سے ہوتے ہیں اور کہا جاتا ہیکہ نوجوان تیز رفتار گاڑیاں چلا کر حادثات کا شکار ہوتے ہیں اور گاڑیوں پر سواری کرنے کو ہوا میں سفر کرنے کے مترادف سمجھتے ہیں مگر ان نوجوانوں سے زیادہ لاپرواہی برتنے والے ایک اور عمر کے افراد بھی اس طرح کی حرکتوں اور حادثات کے شکار ہونے کا سائبرآباد پولیس کی تحقیقات سے واضح ہوا ہے۔ نوجوان نسل کے مقابلہ کافی سوچھ سمجھ کر قدم آگے بڑھانے کی عمر والے افراد کا اس فہرست میں شامل ہونا کافی تشویشناک بات ہے۔ تمام سڑک حادثات میں 28 فیصد ایسے افراد کی تعداد کا ہونا قابل غور ہے۔ سڑک حادثات کی روک تھام کیلئے مسلسل کئی طرح کے اقدامات کئے جانے کے باوجود خاطرخواہ فوائد نہیں مل رہے ہیں۔ تاحال نوجوان ہی حادثات کا سبب بننے سے متعلق مشہور تھے۔ خاص طور پر کالجس کے طلبہ ٹریفک قواعد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے گاڑیاں چلانے کیلئے بدنام تھے مگر اس معاملہ میں درمیانی عمر والے افراد ہی ان سے آگے ہونے کا تحقیقات سے واضح ہوا ہے۔ سائبرآباد کمشنریٹ علاقہ میں ہونے والے حادثات سے متعلق کی گئی پولیس تحقیقات سے یہ انکشاف ہوا ہے۔ امسال کے سات ماہ میں ہونے والے حادثات کی تحقیقات سے یہ تعجب خیز نتیجہ اخذ کیا گیا ہے۔
ذہنی تناؤ اصل وجہ
بی ٹیک، ایم ٹیک پڑھنے والے طلبہ عام طور پر 25 برس کے اندر ہوتے ہیں اور اس عمر کے افراد عام طور پر شہر میں ہونے والے حادثات کا سبب بن رہے ہیں مگر سڑک حادثات میں ہلاک ہونے والے 45-35 برس عمر کے افراد ہی اول نمبر پر ہیں۔ عام طور سے اس عمر کے افراد خاندانی ذمہ داریوں کے لحاظ سے سوچ سمجھ کر قدم اٹھاتے ہیں اور سارا خاندان ان ہی پر منحصر ہوتا ہے۔ اگر اس عمر والے ذمہ دار افراد کو کچھ بھی ہو تو سارا خاندان سڑک پر آنے کا خدشہ لاحق رہتا ہے۔ سائبرآباد کمشنریٹ کے احاطہ میں سات ماہ میں ہونے والے سڑک حادثات میں اسی عمر کے افراد کی ہلاکت زیادہ ہے اور ان حادثات میں 450 افراد ہلاک ہوگئے جن میں 45-35 برس عمر کے افراد کی تعداد 133 ہے جو قابل تشویش بات ہے اور ان کا فیصد 28 سے بڑھ کر ہے۔ اس عمر کے افراد ذمہ داری کے احساس کے باوجود حادثات کا شکار ہونے کی وجوہات پر غور کرنے سے معلوم ہوا ہیکہ وہ افراد ذہنی تناؤ کا شکار ہونے کی وجہ سے حادثات پیش آرہے ہیں۔ ماہرین کے مطابق ہر عمر والے افراد میں ذہنی تناؤ پایا جاتا ہے مگر گاڑیاں چلاتے وقت ذہن کسی اور سوچ میں مبتلاء ہونے کی وجہ سے حادثات پیش آرہے ہیں۔ اسی لئے پولیس نے مشورہ دیا ہیکہ 45-35 عمر والے افراد گاڑیاں چلاتے وقت اور زیادہ ہوشیار و ذہنی تناؤ سے علحدہ ہوکر گاڑیاں چلائیں تاکہ حادثات کے ذریعہ اپنی زندگی کو ختم کرکے افراد خاندان اور معصوم بچوں کی زندگیاں سڑکوں پر آنے سے بچایا جاسکے۔
سائبرآباد میں امسال جنوری تا جولائی
ہونے والے حادثات
18 برس سے کم عمر اموات 22
18 تا 25 برس عمر افراد کی اموات 93
35-25 برس عمر افراد کی اموات 118
45-35 برس عمر افراد کی اموات 133
60-45 برس عمر افراد کی اموات 71
60 برس سے زائدعمر کی اموات 22

TOPPOPULARRECENT