Tuesday , November 13 2018
Home / ہندوستان / سڑک حادثہ کا شکار مسلم جوڑے کو 26 لاکھ روپئے معاوضہ

سڑک حادثہ کا شکار مسلم جوڑے کو 26 لاکھ روپئے معاوضہ

تھانے 2 فروری (سیاست ڈاٹ کام) ابوظہبی کے ایک سابق ملازم اور اُس کی بیوی جو 2012 ء میں سڑک حادثہ کا شکار ہوگئے تھے، موٹر ایکسیڈنٹ کلیمس ٹریبونل (ایم اے سی ٹی) نے دونوں کو 26 لاکھ روپئے ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔ مذکورہ جوڑے نے قبل ازیں نوی ممبئی میں پیش آئے اِس حادثہ کے بعد ایک کروڑ روپئے معاوضہ کا مطالبہ کیا تھا۔ دو روز قبل ایم اے سی ٹی رکن کے ڈی وڈانے نے اس حادثہ کے ذمہ دار پوپٹ وکاڈے کو اس حادثہ کے لئے ذمہ دار قرار دیتے ہوئے معاوضہ کی ادائیگی کا حکم دیا ہے۔ واضح رہے کہ 43 سالہ یاسین عبدالحمید مقدم اور 40 سالہ اُن کی اہلیہ شمیم مقدم ساکن سی بی ڈی بیلاپور نوی ممبئی کے ساتھ اُس وقت حادثہ پیش آیا تھا جب 13 جون 2012 ء کی شب وہ موٹر سائیکل پر سوار ہوکر واشی بیلاپور پالم بیچ پر جارہے تھے۔ جبکہ مذکورہ جیپ بیلاپور سے آتے ہوئے اچانک موڑ دینے کی وجہ سے مذکورہ مقدم جوڑے کو زبردست ٹکر دے دی۔ جس سے وہ کافی دور جاگرے تھے۔ مقدم نے اپنی عرضی میں بتایا کہ بُری طرح سے زخمی ہونے کے بعد اُنھیں بڑے پیمانے پر میڈیکل اخراجات برداشت کرنے پڑے اور وہ اپنی ملازمت سے عارضی طور پر محروم ہوگئے۔ جس کی وجہ سے اُن پر مزید مالی بوجھ عائد ہوگیا جبکہ اس سے پہلے وہ ابوظہبی میں 74 ہزار روپئے ماہانہ کمارہے تھے اور اُن کی اہلیہ ایک لاکھ 15,460 روپئے ماہانہ کمارہی تھیں۔ تاہم اس حادثہ کے بعد وہ مکمل طور پر معذور ہوگئے۔

TOPPOPULARRECENT