Wednesday , January 24 2018
Home / کھیل کی خبریں / سہواگ اور یوراج ورلڈ کپ میںنہیں ہوں گے : گنگولی

سہواگ اور یوراج ورلڈ کپ میںنہیں ہوں گے : گنگولی

نئی دہلی۔ 18 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق اور جارحانہ کپتان سورو گنگولی نے آج ان امکانات کو مسترد کردیا ہے کہ ٹیم کے سینئر اوپنر ویریندر سہواگ اور آل راؤنڈر یوراج سنگھ آئندہ برس منعقد شدنی ورلڈ کپ میں ہندوستانی ٹیم کا حصہ ہوں گے۔ گنگولی نے جو یہاں ایک ایونٹ میں شرکت کے دوران میڈیا نمائندوں سے اظہار خیال کرتے ہوئے

نئی دہلی۔ 18 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق اور جارحانہ کپتان سورو گنگولی نے آج ان امکانات کو مسترد کردیا ہے کہ ٹیم کے سینئر اوپنر ویریندر سہواگ اور آل راؤنڈر یوراج سنگھ آئندہ برس منعقد شدنی ورلڈ کپ میں ہندوستانی ٹیم کا حصہ ہوں گے۔ گنگولی نے جو یہاں ایک ایونٹ میں شرکت کے دوران میڈیا نمائندوں سے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ سہواگ اور یوراج کے لئے ورلڈ کپ میں ٹیم کی نمائندگی کرنا مشکل ترین ہوچکا ہے کیونکہ ورلڈ کپ کے انعقاد میں اب زیادہ وقت باقی نہیں رہا لہذا ان حالات میں ٹیم کے کپتان مہیندر سنگھ دھونی ٹیم میں زیادہ تبدیلی کے حق میں نہیں ہوسکتے۔ گنگولی اپنی قیادت کے دوران نوجوان اور باصلاحیت کھلاڑیوں کو موقع فراہم کرنے کیلئے جانے جاتے تھے ۔

انہوں نے سہواگ اور یوراج کو میچ کو اپنی ٹیم کے حق میں کرنے والے کھلاڑی اور کسی بھی لمحہ کامیابی سے ہمکنار کرنے والے کھلاڑی قرار دیا اور کہا کہ یوراج اور سہواگ جیسے کھلاڑی ٹیم کو کسی بھی لمحہ کامیابی دلواسکتے ہیں اور انہوں نے اپنے کریر میں ایسا متعدد مرتبہ کیا ہے لیکن میں سمجھتا ہوں کہ اب وقت تیزی کے ساتھ گذر رہا ہے۔ گنگولی نے یہاں منعقدہ پروگرام ’’سلام کرکٹ کنکلیو‘‘ کے موقع پر میڈیا نمائندوں سے اظہار خیال کرتے ہوئے آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں منعقد شدنی ورلڈ کپ میں ہندوستانی ٹیم اپنے خطاب کا کامیاب دفاع کرسکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہندوستان کے پاس ونڈے کی ایک بہترین ٹیم ہے حالانکہ ٹسٹ کرکٹ میں خصوصاً بیرون ملک اس کے مظاہرے بہتر نہیں ہیں لیکن ونڈے کرکٹ میں ہندوستانی ٹیم ایک متوازن ٹیم ہے جو آئندہ برس فروری میں اپنے خطاب کا دفاع کرسکتی ہے۔ دریں اثناء آسٹریلیائی سابق کپتان رکی پونٹنگ کے بیان جس میں انہوں نے ورلڈ کپ کے تناظر میں کہا تھا کہ ہر ٹیم کو ایک ایکس فیکٹر کی ضرورت ہے

اس پر اظہار خیال کرتے ہوئے گنگولی نے کہا کہ ہندوستان کے پاس یہ صلاحیت موجود ہے۔ گنگولی کے بموجب ہندوستان کے پاس چار یا پانچ ایسے کھلاڑی موجود ہیں جو کہ آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی سرزمین پر بہتر مظاہرہ کرسکتے ہیں اور یہی دھونی کی ٹیم کیلئے ایکس فیکٹر ہیں۔ ویسٹ انڈیز کے خلاف حالیہ منعقدہ ونڈے سیریز میں ویراٹ کوہلی اور سریش رائنا کے مظاہروں کی ستائش کرتے ہوئے گنگولی نے کہا کہ ہندوستان کی مستقبل میں فتوحات کا زیادہ تر انحصار ان دو کھلاڑیوں پر رہے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ کوہلی نے بیرونی ممالک میں بہتر مظاہرہ کیا ہے۔ جیسا کہ آسٹریلیا اور جنوبی آفریقہ کے خلاف کوہلی نے ٹیم کیلئے کامیابی دلوانے والی اننگز کھیلی ہے۔ دوسری جانب رائنا نے حالیہ دنوں میں بہتر مظاہرہ کیا ہے اور انہیں ان مظاہروں کے تسلسل کو آسٹریلیا تک لے جانا ہوگا ۔ گنگولی نے کہا کہ ہندوستان کے علاوہ آسٹریلیا ، جنوبی آفریقہ ، سری لنکا اور نیوزی لینڈ اُن ٹیموں میں شامل ہے جو ورلڈ کپ کی دعویدار ہیں۔

TOPPOPULARRECENT